بند کریں
صحت صحت کی خبریںسندھ ہیلتھ ایمپلائز ایکشن کمیٹی کے نمائندہ وفد کی حافظ نعیم الرحمن سے ملاقات، ادارو ں کے ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:26:32 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:26:32 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:20:01 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:16:02 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:15:58 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:06:34 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:02:54 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:00:31 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 22:22:08 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 22:21:18 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 21:30:58

سندھ ہیلتھ ایمپلائز ایکشن کمیٹی کے نمائندہ وفد کی حافظ نعیم الرحمن سے ملاقات، ادارو ں کے ملازمین کے مسائل اور مشکلات سے آگاہ کیا

کراچی (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 06 جنوری 2015ء)سندھ ہیلتھ ایمپلائز (NICVD,JPMC,NICH)ایکشن کمیٹی کے نمائندہ وفد نے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن سے ادارہ نور حق میں ملاقات کی اور اپنے ادارو ں کے ملازمین کے مسائل اور مشکلات سے آگاہ کیا اور بتایا کہ اٹھارویںآ ئینی ترمیم کے تحت ان اداروں کی وفاقی حکومت سے صوبائی حکومت کے پاس منتقلی کے بعد ملازمین کی مراعات اور سہولیا ت میں غیر معمولی طور پر کمی اور کٹوتی کردی گئی ہے جنھیں بحال کرنے کے لیے ملازمین جدوجہد کررہے ہیں ۔

وفد نے حافظ نعیم الرحمن سے اپیل کی کہ وہ ہمارے مطالبات کے حق میں آواز اٹھائیں اور اس سلسلے میں اپنا کردار اد ا کریں ، ملاقات میں جماعت اسلامی کراچی کے نائب امیر مظفر احمد ہاشمی بھی موجود تھے جبکہ وفد میں ریاض خٹک ، فیصل چوہدری ، شاہد اقبال ، زریاب ٹوانہ اور ایکشن کمیٹی کے دیگر ذمہ داران شامل تھے ، وفد نے بتایا کہ ملازمین کو آئینی ترمیم کے تحت سندھ حکومت کے ماتحت کام کرنے پر کوئی اعتراض نہیں ہے تاہم ہمارا مطالبہ ہے کہ ڈیپوٹیشن الاؤنس ، ہیلتھ الاؤنس ، جی پی فنڈاور ہاؤس ہائرنگ الاؤنس سمیت وفاقی حکومت کی طرف سے جو سہولیات اور مراعات دی گئی تھیں ان کو ختم نہ کیا جائے ۔

وفد نے بتایا کہ ان سہولیات کو فی الوقت ختم کردیا گیا ہے اور ملازمین کے جائز مطالبات پر کوئی توجہ نہیں دی جارہی جبکہ دوسری طرف پولیس کے جانب سے پرامن مظاہرہ کرنے پر ملازمین کے خلاف جھوٹے مقدمات بنائے جارہے ہیں اور انھیں ہراساں کیا جارہا ہے ،حافظ نعیم الرحمن نے وفد کو یقین دلایا کہ جماعت اسلامی ان کے جائز مطالبات کے حق میں اور ان کی منظوری کے لیے ان کے ساتھ ہے ، حکومت کا فرض ہے کہ وہ ملازمین کے تحفظات کو دور کرے اور ان کو جائز مراعات اور سہولیات سے محروم نہ کیا جائے ، انھوں نے مزید کہاکہ پولیس کی جانب سے جھوٹے مقدمات کسی طرح بھی مناسب نہیں انھیں فی الفور ختم کیا جائے ۔

06/01/2015 - 23:06:34 :وقت اشاعت