بند کریں
صحت صحت کی خبریںسائنسدانوں نے صحت مند رضاکاروں پر ایبولا کی نئی ویکسین آزمانے کے تجربات شروع کر دئیے

صحت خبریں

وقت اشاعت: 07/01/2015 - 16:43:00 وقت اشاعت: 07/01/2015 - 15:52:26 وقت اشاعت: 07/01/2015 - 15:49:18 وقت اشاعت: 07/01/2015 - 15:37:50 وقت اشاعت: 07/01/2015 - 14:39:35 وقت اشاعت: 07/01/2015 - 12:36:38 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:30:13 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:26:32 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:26:32 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:20:01 وقت اشاعت: 06/01/2015 - 23:16:02

سائنسدانوں نے صحت مند رضاکاروں پر ایبولا کی نئی ویکسین آزمانے کے تجربات شروع کر دئیے

لندن (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 07 جنوری 2015ء)آ کسفورڈ یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے صحت مند رضاکاروں پر ایبولا کی نئی ویکسین آزمانے کے تجربات شروع کر دئیے ہیں گذشتہ سال ستمبر میں بھی آ کسفورڈ میں ایبولا کی مختلف ویکسین آزمانے کا تجربہ کیا گیا تھا۔ نئے تجربے میں 18 اور 50 سال کے 72 رضاکار شامل ہیں جن پر ایبولا کی نئی ویکسین آزمائی جائے گی۔

جانسن اینڈ جانسن فارماسوٹیکل کمپنی کی بنائی گئی اس ویکسین کو بندروں پر کامیابی سے آزمایا جا چکا ہے۔آ کسفورڈ یونیورسٹی کے ڈاکٹر میتھیو سنیپ کا کہنا ہے کہ تمام رضاکاروں پر ایک ماہ کے اندر اندر ایبولا کی نئی ویکسین آزمائی جائے گی۔ تجربے کے پہلے مرحلے میں رضاکاروں کو انجکشن لگائے جائیں گے ‘ دوسرے مرحلے میں ایک یا دو ماہ بعد انھیں ایبولا کی ایک اور ڈوز دی جائے گی۔

اسی طرح کے تجربات امریکہ اور تین افریقی ممالک میں بھی کیے جائیں گے۔جانسن اینڈ جانسن نے اس امید کا اظہار کیا کہ فیز ٹو میں آئندہ تین ماہ کے دوران یہ ویکسین ٹرائل مقاصد کیلئے یورپ اور رواں سال کے وسط تک افریقی ممالک لائیبیریا، گنی اور سیرالیون میں استعمال کے لیے دستیاب ہو گی۔کمپنی کا کہنا ہے کہ وہ اس سال ایبولا ویکسین کے 20 لاکھ ڈوزز بنانے کے قابل ہو گی۔

07/01/2015 - 12:36:38 :وقت اشاعت