بند کریں
صحت صحت کی خبریںمحکمہ صحت میں ایویلیوایشن اینڈ مانیٹرنگ سسٹم نے کام شرو ع کر دیا ،
172 مانیٹرنگ اینڈ ایویلیوایشن ..

صحت خبریں

وقت اشاعت: 20/01/2015 - 22:20:18 وقت اشاعت: 20/01/2015 - 21:08:47 وقت اشاعت: 20/01/2015 - 21:00:09 وقت اشاعت: 20/01/2015 - 20:48:35 وقت اشاعت: 20/01/2015 - 20:44:07 وقت اشاعت: 20/01/2015 - 20:41:38 وقت اشاعت: 20/01/2015 - 17:29:26 وقت اشاعت: 20/01/2015 - 17:00:48 وقت اشاعت: 20/01/2015 - 16:19:51 وقت اشاعت: 20/01/2015 - 16:19:00 وقت اشاعت: 20/01/2015 - 16:17:24

محکمہ صحت میں ایویلیوایشن اینڈ مانیٹرنگ سسٹم نے کام شرو ع کر دیا ،

172 مانیٹرنگ اینڈ ایویلیوایشن اسسٹنٹ کی بھرتی ، تربیت مکمل ، خواجہ سلمان رفیق نے ٹیبلٹ کمپیوٹر تقسیم کئے

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔20جنوری2015ء ) مشیر صحت پنجاب خواجہ سلمان رفیق نے کہا ہے کہ محکمہ صحت میں پرائمری ہیلتھ کیئرسینٹرز کی مانیٹرنگ اینڈ ایویلیوایشن کا نظام متعارف کرا دیا گیا ہے اور پورے صوبے میں 172 مانیٹرنگ اینڈ ایویلیوایشن اسسٹنٹ بھرتی کر کے تعیناتی کر دی گئی ہے ،یہ اہلکار بنیادی مراکز صحت(BHU) اور دیہی مراکز صحت(RHC) کی نگرانی اور پڑتال کر کے محکمہ صحت کو رپورٹ کریں گے۔

انہوں نے یہ بات ارفع کریم ٹاور میں پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ(PITB) کے آفس میں 172 مانیٹرنگ اینڈ ایلیوایشن اسسٹنٹ میں ٹیبلٹ کمپیوٹر تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر PITB کے چیئرمین ڈاکٹر عمر سیف ، ڈائریکٹر جنرل PITBعامر چوہدری ،پالیسی اینڈ سٹرٹیجک یونٹ(PSPU) محکمہ صحت کے ڈائریکٹر علی بہادر قاضی اور دیگر افسران نے شرکت کی۔

خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ مذکورہ اہلکاروں کی میرٹ پر بھرتی کی گئی ہے اور تمام کام PSPU کی زیر نگرانی کیا گیا ہے جبکہ ٹریننگ اور مانیٹرنگ ماڈیولز PITB کے تعاون سے تیار کئے گئے ہیں ۔پالیسی اینڈ سٹرٹیجک پالیسی یونٹ کے ڈائریکٹر علی بہادر قاضی نے بتایا کہ نئے سسٹم سے بنیادی مراکز صحت اور دیہی مراکز صحت میں طبی آلات اور ادویات کی فراہمی، دستیابی ، ڈاکٹروں اور پیرا میڈکس کی حاضری ، پرفارمنس کی مانیٹرنگ اور پڑتال مذکورہ اہلکاروں کے ذمہ ہو گی جو وہ باقاعدگی کے ساتھ محکمہ صحت کو مجوزہ فارم پر کر کے ارسال کریں گے ۔

خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ مانیٹرنگ اینڈ ایویلیوایشن سسٹم کا مقصد عوام تک بنیادی صحت کی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانا اور ایسے مسائل کی نشاندہی کرنا ہے جو اس راستے میں حائل ہوسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے محکمہ صحت کے افسران کو بھی اس سلسلہ میں ذمہ داریاں سونپی ہیں۔ خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ ہیلتھ ڈلیوری سسٹم کو فعال بنانے اور اس کی ترقی کے لئے چیف منسٹر ہیلتھ روڈ میپ پر تیزی سے عملدرآمد کیا جا رہا ہے اور اصلاحات متعارف کرائی جا رہی ہیں۔

خواجہ سلمان رفیق نے کہا کہ مانیٹرنگ اینڈ ایویلیوایشن اسسٹنٹ کی جانب سے بھیجے جانے والے ڈیٹا کا مکمل تجزیہ کیا جائے گا اور ان کی رپورٹ اور تجاویز کو پالیسی سازی میں جگہ دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ مذکورہ اہلکاروں کو جلد ہی موٹر سائیکلیں بھی فراہم کر دی جائیں گی۔

20/01/2015 - 20:41:38 :وقت اشاعت