بند کریں
صحت صحت کی خبریںعوام کو صحت کی معیاری سہولیات کی فراہمی کیلئے فنڈز فراہم کئے گئے ہیں‘ مجتبیٰ شجاع الرحمن

صحت خبریں

وقت اشاعت: 24/03/2015 - 16:15:39 وقت اشاعت: 24/03/2015 - 16:15:02 وقت اشاعت: 24/03/2015 - 16:07:03 وقت اشاعت: 24/03/2015 - 16:06:27 وقت اشاعت: 24/03/2015 - 16:06:26 وقت اشاعت: 24/03/2015 - 16:06:26 وقت اشاعت: 24/03/2015 - 14:18:30 وقت اشاعت: 24/03/2015 - 13:58:42 وقت اشاعت: 24/03/2015 - 13:58:42 وقت اشاعت: 24/03/2015 - 12:41:46 وقت اشاعت: 23/03/2015 - 17:30:19

عوام کو صحت کی معیاری سہولیات کی فراہمی کیلئے فنڈز فراہم کئے گئے ہیں‘ مجتبیٰ شجاع الرحمن

لاہور ( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔24مارچ۔2015ء) وزیرقانون، ایکسائز و ٹیکسیشن،خزانہ پنجاب مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا ہے کہٹی بی قابل علاج مرض ہے اور باقاعدگی سے پورا علاج کرانے پر مریض مکمل صحت یاب ہوجاتا ہے اور اس مہلک سے ہمیشہ کے لئے محفوظ ہو جاتا ہے،عوام میں تمباکو نوشی کے خلاف شعور بیدار کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ ہر سال لاکھوں افراد سگریٹ نوشی کے باعث چیسٹ کینسر کا شکار ہو کر موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں اور 600ملین لوگ تمباکو نوشی کی پیچیدگیوں کے باعث ٹی بی و پھیپھٹروں کی خطرناک بیماریوں سے متاثر ہیں ،کینسر و دیگر موذی امراض کے علاج کے لئے عوام میں شعور بیدار کیا جائے کیونکہ صوبہ کے ٹیچنگ و بڑے سرکاری ہسپتالوں میں کینسر کے علاج کی سہولتیں میسر ہیں ۔

ٹی بی کے عالمی دن کے موقع پرڈاکٹرزو لوگوں کے وفود سے گفتگو کرتے ہوئے مجتبیٰ شجاع الرحمن نے کہا کہ4ارب روپے سے ہیلتھ انشورنس کارڈ سکیم شروع کی جارہی ہے جس کی بدولت کم آمدنی والے افراد سرکاری ہسپتالوں کے علاوہ بہترین نجی طبی اداروں میں بھی علاج کی مفت سہولت حاصل کر سکیں۔ انہوں نے کہا کہ کم وسیلہ افراد کو صحت کی معیاری سہولیات و ادویات کی بلا معاوضہ فراہمی کے لئے8ارب 75 کروڑ روپے ، گردے کے مریضوں کے لئے ڈائلسز کی سہولت کیلئے 60 کروڑ روپے کے فنڈز فراہم کئے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ترقی پذیر اضلاع خصوصا جنوبی پنجاب کے علاقوں کے لئے موبائل ہیلتھ یونٹس فراہم کئے جائیں گے جس کے لئے ایک ارب روپے کے فنڈز مختص کئے گئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ پولیو کے علاوہ حفاظتی ٹیکوں کی مہم کے دوان بچوں کو9 مہلک بیماریوں ،ٹی بی،پولیو خناق ،کالی کھانسی،تشنج، ہیپاٹائٹس،گردن توڑ بخار، نمونیہ اور خسرہ سے بچاؤ کے حفاظتی ٹیکے ہیلتھ سنٹرز،ہسپتالوں اور موبائل ٹیموں کے ذریعے بلا معاضہ لگائے جا تے ہیں۔

24/03/2015 - 16:06:26 :وقت اشاعت