بند کریں
صحت صحت کی خبریںزچگی کے دوران ہلاکتوں کے معاملے میں پاکستان 179 ممالک میں149 ویں نمبر پر آگیا

صحت خبریں

وقت اشاعت: 13/07/2015 - 13:17:02 وقت اشاعت: 13/07/2015 - 12:25:58 وقت اشاعت: 11/07/2015 - 16:48:25 وقت اشاعت: 11/07/2015 - 13:07:26 وقت اشاعت: 10/07/2015 - 16:35:08 وقت اشاعت: 09/07/2015 - 13:14:26 وقت اشاعت: 09/07/2015 - 13:14:26 وقت اشاعت: 09/07/2015 - 06:24:06 وقت اشاعت: 08/07/2015 - 16:06:20 وقت اشاعت: 08/07/2015 - 13:50:10 وقت اشاعت: 07/07/2015 - 15:15:31

زچگی کے دوران ہلاکتوں کے معاملے میں پاکستان 179 ممالک میں149 ویں نمبر پر آگیا

کراچی( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 09 جولائی۔2015ء)زچگی کے دوران ہلاکتوں کے معاملے میں پاکستان 179 ممالک میں149ویں نمبر پر ہے اور پاکستان میں لاکھوں خواتین اسقاط حمل اور قبل از پیدائش پیچیدگیوں جیسے مسائل کا شکار ہیں جبکہ پاکستان اقوام متحدہ کے ”ملینیئم گول پروگرام“ کے تحت زچہ و بچہ کی صحت سمیت سماجی ترقی کے حوالے سے متعین کردہ وہ تمام اہداف حاصل کرنے میں ناکام رہا ہے جو اسے 2015تک حاصل کرنا تھے۔

اقوام متحدہ کی جانب سے جاری رپورٹ کے مطابق پاکستان میں ہر ایک لاکھ میں سے 276 خواتین زچگی کے دوران ہلاک ہوجاتی ہیں۔ اقوام متحدہ کے مطابق پاکستان میں ملینئیم ڈویلپمنٹ اہداف پر عمل کرتے ہوئے 15 برسوں میں حاملہ خواتین کی اموات کی تعداد کو کم کر کے 140 تک لانا تھا لیکن پاکستان اس میں ناکام رہا ہے۔حکومتی اداروں نے دعویٰ کیا ہے کہ صحت کے بنیادی مراکز حاملہ خواتین کی دیکھ بھال اور ڈیلیوری سروسز کیلئے 24 گھنٹے فعال ہوتے ہیں لیکن اِن بنیادی صحت کے مراکز میں اکثر و بیشتر وہ ضروری آلات ہی موجود نہیں ہوتے جس کی مدد سے مائیں باآسانی بچوں کو جنم دے سکیں جبکہ ملک بھر میں بہت سے مراکز تو سرے سے غیر موثر ہیں۔

دوسری جانب بین الاقوامی امدادی ادارے سیو دی چلڈرن کے حالیہ اعدادو شمار کے مطابق زچگی کے دوران ہلاکتوں کے معاملے میں پاکستان 179 ممالک میں149 ویں نمبر پر ہے اور پاکستان میں لاکھوں خواتین اسقاط حمل اور قبل از پیدائش پیچیدگیوں جیسے مسائل کا شکار ہیں۔ادارے کے اعدادو شمار بتاتے ہیں کہ پاکستان حاملہ خواتین کیلئے جنوبی ایشیا کا دوسرا بدترین ملک ہے۔

09/07/2015 - 13:14:26 :وقت اشاعت