بند کریں
صحت صحت کی خبریں خود کو تنہا محسوس کر نے والے افرادسرطان ،فالج اور امراض قلب کا شکار ہو جاتے ہیں، سائنسدان

صحت خبریں

وقت اشاعت: 07/01/2016 - 12:37:23 وقت اشاعت: 07/01/2016 - 12:01:57 وقت اشاعت: 06/01/2016 - 16:07:21 وقت اشاعت: 06/01/2016 - 15:06:52 وقت اشاعت: 06/01/2016 - 14:42:21 وقت اشاعت: 06/01/2016 - 14:11:59 وقت اشاعت: 05/01/2016 - 16:28:30 وقت اشاعت: 05/01/2016 - 16:14:11 وقت اشاعت: 05/01/2016 - 14:47:43 وقت اشاعت: 05/01/2016 - 13:50:43 وقت اشاعت: 05/01/2016 - 13:49:55

خود کو تنہا محسوس کر نے والے افرادسرطان ،فالج اور امراض قلب کا شکار ہو جاتے ہیں، سائنسدان

ڈرہم ، نارتھ کیرولینا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔06 جنوری۔2016ء) سائنسدانوں نے خبر دار کیا ہے کہ تنہا رہنا یا خود کو تنہا محسوس کرنا انسان کے لیے اس قدر خطرناک ہے کہ اس سے سرطان، فالج اور امراضِ قلب کا شکار ہونے کا بھی خدشہ ہوتا ہے۔سائنسدانوں کے مطابق تنہائی میں رہنا یا خود کو تنہا محسوس کرنے ایسا ہی جیسے ذیابیطس کا شکار ہونا یا ورزش کو چھوڑدینا۔

یونیورسٹی آف نارتھ کیرولینا کے ماہرین کا کہنا ہے کہ نوجوانی میں اگر آپ الگ تھلگ اور تنہا رہتے ہیں تو آپ کے بدن میں سوزش کا خطرہ بڑھ جاتا ہے جبکہ بڑھاپے میں تنہائی سے بلڈ پریشر بلند ہوسکتا ہے،ماہرین کے مطابق تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ نوجوانوں کو دوسروں سے گھل مل کر رہنا چاہیے اور سماجی رابطے بڑھانا چاہئیں ورنہ اس کے ایسے ہی مضر اثرات مرتب ہوسکتے ہیں جو خراب غذا کھانے یا ورزش چھوڑنے سے ہوتا ہے۔

ماہرین کے نزدیک اس سے قبل کئی مطالعات سے ثابت ہوچکا ہے کہ بوڑھے افراد اگر بہت سے لوگوں کے رابطے میں ہوں اور ان سے گفتگو کریں تو اس طرح وہ بیماریوں سے محفوظ رہتے ہیں اور طویل عمرپاتے ہیں۔ماہرین کا کہنا ہے کہ تحقیق یہ بتاتی ہے کہ عمر کے ہر مرحلے پر دوستوں کی محفل اور سماجی رابطے کتنے ضروری ہوتے ہیں اس لیے ماہرین زور دیتے ہیں کہ جوان خواتین و حضرات اپنے بزرگوں سے ضرور ملیں اور ان سے گفتگو کریں جس کے بہت مثبت اثرات مرتب ہوتے ہیں اور ان میں امراضِ قلب کا خطرہ بھی ٹل سکتا ہے۔ اسی طرح نوجوانوں کی دوستوں کے ساتھ زندگی انہیں اداسی اور موٹاپے سے بچاتی ہے۔

06/01/2016 - 14:11:59 :وقت اشاعت