بند کریں
صحت صحت کی خبریںتجرباتی دوا لینے والے فرانسیسی رضاکار کا انتقال ہوگیا

صحت خبریں

وقت اشاعت: 18/01/2016 - 15:34:18 وقت اشاعت: 18/01/2016 - 14:33:46 وقت اشاعت: 18/01/2016 - 14:30:14 وقت اشاعت: 18/01/2016 - 14:19:47 وقت اشاعت: 18/01/2016 - 13:58:03 وقت اشاعت: 18/01/2016 - 13:03:10 وقت اشاعت: 18/01/2016 - 12:08:06 وقت اشاعت: 18/01/2016 - 11:40:26 وقت اشاعت: 18/01/2016 - 11:09:17 وقت اشاعت: 18/01/2016 - 11:09:17 وقت اشاعت: 16/01/2016 - 16:53:35

تجرباتی دوا لینے والے فرانسیسی رضاکار کا انتقال ہوگیا

پیرس(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔18 جنوری۔2016ء )ایک ایسا شخص جس کا دماغ ایک تجرباتی دوا کے استعمال کے بعد مفلوج ہو گیا تھا، انتقال کر گیا ۔ فرانس کے مقامی میڈیا کے مطابق ایسا شخص جس کا دماغ ایک تجرباتی دوا کے استعمال کے بعد مفلوج ہو گیا تھا، انتقال کر گیا ہے۔ وہ ان چھ لوگوں میں سے ایک تھا جس کا فرانسیسی شہر رین میں علاج کیا گیا تھا۔ ہسپتال کا کہنا ہے کہ بقیہ پانچ افراد کی حالت مستحکم ہے، البتہ ان میں سے چار کو اعصابی مسائل کا سامنا ہے جبکہ پانچواں بالکل ٹھیک ہے۔

فرانس کی وزارتِ صحت نے ان اطلاعات کی تردید کی ہے کہ یہ دراصل چرس سے بنائی گئی دردکش دوا تھی۔ پیرس کے استغاثہ نے تفتیش شروع کر دی ہے۔ اس دوا کا تجربہ رین کی ایک نجی تجربہ گاہ نے شروع کیا تھا۔ 90 رضاکاروں نے یہ دوا لینا شروع کی تھی، جن میں سے دس دوسرے افراد کا معائنہ کیا گیا ہے تاہم ان میں کسی مرض کے آثار نہیں پائے گئے۔

18/01/2016 - 13:03:10 :وقت اشاعت