بند کریں
صحت صحت کی خبریںتھر پارکر،غذائی قلت سے مزید 2 بچے جاں بحق، ہلاکتوں کی تعداد 122 ہو گئی

صحت خبریں

وقت اشاعت: 02/02/2016 - 14:52:13 وقت اشاعت: 02/02/2016 - 14:44:50 وقت اشاعت: 02/02/2016 - 12:30:35 وقت اشاعت: 02/02/2016 - 12:28:56 وقت اشاعت: 02/02/2016 - 11:41:32 وقت اشاعت: 02/02/2016 - 11:41:32 وقت اشاعت: 01/02/2016 - 16:39:23 وقت اشاعت: 01/02/2016 - 16:19:48 وقت اشاعت: 01/02/2016 - 16:14:03 وقت اشاعت: 01/02/2016 - 14:11:35 وقت اشاعت: 01/02/2016 - 13:36:33

تھر پارکر،غذائی قلت سے مزید 2 بچے جاں بحق، ہلاکتوں کی تعداد 122 ہو گئی

مٹھی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔02 فروری۔2016ء )تھرپارکر میں 33 روز میں غذائی قلت سے جاں بحق کی تعداد 122 تک پہنچ گئی جبکہ صوبائی حکومت کی طرف سے غذائی قلت کو کم کرنے کے لیے کوئی خاطر خواہ اقدامات نہ کیے گئے ۔ صحرائے تھر میں موت کا رقص جاری ، چھاچھرو کے نجی ہسپتال میں غذائی قلت سے بیمار مزید دو بچے چل بسے ، 33 روز میں جاں بحق کی تعداد 122 ہو گئی۔

تھر پارکر میں غذائی قلت سے بیمار بچوں کی ہلاکتوں کا سلسلہ نہ رک سکا ، صحرائے تھر میں مزید دو پھول مرجھا گئے ، چھاچھرو کے نجی ہسپتال میں دو سالہ ربنواز سنگراسی دم توڑ گیا اور 5 روز کا علی گل سنگراسی بھی موت کی وادیوں میں چلا گیا۔ جبکہ تھرپارکر میں 33 روز میں غذائی قلت سیجاں بحق کی تعداد 122 تک پہنچ گئی ، سائیں سرکار کی طرف سے متاثرہ علاقوں میں صحت کی ٹیمیں مقرر کرنے سمیت صحت کی بہتری کے تمام تر اعلانات صرف اعلانات ہی رہ گئے ، متاثرہ دیہات میں لوگ حکومتی امداد کے منتطر ہیں ، چھاچھرو ، کھینسر، چیلھار سمیت درجنوں نجی ہسپتالوں میں بھی بیمار بچوں کی آمد کا سلسلہ تیزی سے جاری ہیں۔

02/02/2016 - 11:41:32 :وقت اشاعت