بند کریں
صحت صحت کی خبریں تھر میں غذائی قلت کے باعث مزید 3 بچے دم توڑ گئے،مجموعی تعداد 123 ہوگئی

صحت خبریں

وقت اشاعت: 06/02/2016 - 11:16:09 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 16:18:08 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 15:10:40 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 13:03:12 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 13:02:19 وقت اشاعت: 05/02/2016 - 12:49:53 وقت اشاعت: 04/02/2016 - 16:30:58 وقت اشاعت: 04/02/2016 - 15:15:18 وقت اشاعت: 04/02/2016 - 15:03:47 وقت اشاعت: 04/02/2016 - 13:59:52 وقت اشاعت: 04/02/2016 - 13:54:04

تھر میں غذائی قلت کے باعث مزید 3 بچے دم توڑ گئے،مجموعی تعداد 123 ہوگئی

مٹھی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔05 فروری۔2016ء )تھر میں غذائی قلت اور مختلف بیماریوں کے باعث مزید 3 بچے دم توڑ گئے جس کے بعد رواں برس جاں بحق ہونے والے بچوں کی تعداد 123 ہو گئی ۔ تھر کے علاقے مٹھی کے سول اسپتال میں مختلف بیماریوں کا شکار 3 بچے دم توڑ گئے۔ہسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ دم توڑنے والے بچوں میں 8 ماہ کی ایک بچی جب کہ 23 اور 7 ماہ کے 2 بچے شامل ہیں۔ واضح رہے کہ رواں برس کے آغاز سے اب تک تھر میں غذائی قلت اور مختلف بیماریوں کے باعث 123 بچے جان کی بازی ہار چکے ہیں۔ دوسری جانب وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کا کہنا ہے کہ ہم نے تھر کا نقشہ تبدیل کر کے رکھ دیا ہے اور اب تھر کا تذکرہ واشنگٹن میں بھی ہوتا ہے۔

05/02/2016 - 12:49:53 :وقت اشاعت