بند کریں
صحت صحت کی خبریںبھارت میں گرمی کی لہربرقرار،مزید 24افرادہلاک،تعداد100ہوگئی

صحت خبریں

وقت اشاعت: 12/04/2016 - 14:01:31 وقت اشاعت: 12/04/2016 - 13:58:23 وقت اشاعت: 11/04/2016 - 15:13:56 وقت اشاعت: 11/04/2016 - 15:13:56 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 13:41:09 وقت اشاعت: 09/04/2016 - 13:04:33 وقت اشاعت: 08/04/2016 - 22:12:26 وقت اشاعت: 08/04/2016 - 19:18:10 وقت اشاعت: 08/04/2016 - 16:39:18 وقت اشاعت: 08/04/2016 - 14:57:10 وقت اشاعت: 08/04/2016 - 12:43:33

بھارت میں گرمی کی لہربرقرار،مزید 24افرادہلاک،تعداد100ہوگئی

نئی دہلی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔09 اپریل۔2016ء)بھارت میں گرم موسم کا آغازہوتے ہی پہلے ہفتے میں 100افرادہلاک ہوگئے جبکہ گزشتہ ایک روز میں 24افرادہلاک ہوئے ،بھارت کی جنوبی ریاستوں تلنگانہ اور اندھرا پردیش میں درجہ حرارت 41 سینٹی گریڈ تک پہنچ چکا ہے،جرمن خبر رساں ادارے کے مطابق بھارت میں موسم گرما کی ابتدائی لہر کی وجہ سے گزشتہ نو دنوں 100 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

طبی حکام نے بتایا کہ یہ افراد گرمی کی وجہ سے پیدا ہونے والی بیماریوں کے سبب ہلاک ہوئے ۔بھارت کی جنوبی ریاستوں تلنگانہ اور اندھرا پردیش میں درجہ حرارت 41 سینٹی گریڈ تک پہنچ چکا ہے۔ ماضی کے مقابلے میں اس برس موسم گرما کی شدت کو انتہائی زیادہ قرار دیا جا رہا ہے۔اسی دوران حکام نے عوام کو موسم کی شدت سے بچنے کے لیے احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔

گرمی کی اس شدید لہر سے بچنے کے لیے ریاست تلنگانہ میں مقامی حکام نے بے گھر افراد کو رہائش فراہم کرنے کی مہم بھی شروع کر دی ہے۔ساتھ ہی ہسپتالوں میں ’ہیٹ اسٹروک‘ کے مریضوں کے علاج کے لیے بھی اضافی اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ اسی مقصد سے اس ریاست کے مرکزی ہسپتالوں میں اضافی بستر بھی لگائے جا رہے ہیں۔تلنگانہ کے ہر ضلع میں تین تین ارکان پر مشتمل ٹیمیں تشکیل دے دی گئی ہے، جو موجودہ صورتحال سے نمٹنے میں متعلقہ اداروں کے ساتھ تعاون کریں گی اور گرمی سے ہلاک ہونے والے افراد کا ڈیٹا جمع کریں گی۔

09/04/2016 - 13:04:33 :وقت اشاعت