بند کریں
صحت صحت کی خبریںدمہ کاعالمی دن ، پاکستان کی 7 فیصد سے زائد آبادی بیماری کا شکار

صحت خبریں

وقت اشاعت: 04/05/2016 - 13:26:29 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 13:25:31 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 13:25:31 وقت اشاعت: 04/05/2016 - 13:10:42 وقت اشاعت: 03/05/2016 - 16:52:16 وقت اشاعت: 03/05/2016 - 16:10:50 وقت اشاعت: 03/05/2016 - 16:07:02 وقت اشاعت: 03/05/2016 - 12:59:16 وقت اشاعت: 02/05/2016 - 16:37:18 وقت اشاعت: 02/05/2016 - 15:17:23 وقت اشاعت: 02/05/2016 - 14:27:21

دمہ کاعالمی دن ، پاکستان کی 7 فیصد سے زائد آبادی بیماری کا شکار

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔03 مئی۔2016ء)پاکستان سمیت دنیا بھرمیں دمہ کے بارے میں آگاہی کا دن منایاگیا،ماہرین کے مطابق پاکستان کی 7 فیصد سے زائد آبادی دمہ کا شکار ہے ۔ طبی ماہرین نے اس سے بچاؤ کے لیے احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے پر زور دیا ہے ۔دمہ انفیکشن کی طرح ایک شخص سے دوسرے شخص کو نہیں لگتا بلکہ عام طور پر یہ ایک موروثی بیماری ہے ۔

بعض اوقات ماحول کی آلودگی اور درد یا خون کا دباؤ کم کرنے والی دواؤں کا استعمال دمہ کا باعث بنتا ہے ۔طبی ماہرین کہتے ہیں اس کا صحیح علاج انہیلر کا استعمال ہے۔ انہیلر کا استعمال کھانے والی دوا کی نسبت زیادہ موثر طریقہ علاج ہے ۔ طبی ماہرین کے مطابق دمہ مسلسل بیماری نہیں بلکہ اس کا دورہ پڑتا ہے ۔اگر پاکستان کی بات کی جائے تو ہر سو میں سے دس بچے جبکہ سو میں سے 6 بڑے دمہ سے متاثر ہیں ۔ ماہرین نے خدشہ ظاہرکیا ہے کہ آئندہ 10 برسوں میں اس بیماری کے مریضوں کی تعداد میں بیس سے پچیس فیصد اضافہ ہو سکتا ہے۔

03/05/2016 - 16:10:50 :وقت اشاعت