کسی چیزکویاد کرنے کے بعد ورزش کرنے سے وہ زیادہ دیرتک حافظے میں رہتی ہے‘ تحقیق

لاہور ( اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔18 جون ۔2016ء) ماہرین کے مطابق مطالعے سے معلوم ہوا ہے کہ اگر کوئی شے یاد کرنے کے بعد ورزش کی جائے تو وہ سبق زیادہ دیر تک حافظے کا حصہ بن جاتا ہے۔ماہرین میں ہالینڈ میں کیے جانے والے تجربے میں 72افراد کو شامل کیا جنہیں 3گروپوں میں تقسیم کیا گیا، تینوں گروہوں کو بعض تصاویراوران سے وابستہ مقامات دکھائے گئے اوراس کے بعد ایک گروہ کو فورا اور دوسرے گروہ کو 4گھنٹے بعد ورزش کرائی گئی جبکہ تیسرے گروہ کو کوئی ورزش یا جسمانی سرگرمی نہیں کرائی گئی۔

اس سرگرمی میں شرکا نے 35منٹ تک ورزشی سائیکل چلوائی گئی۔

(جاری ہے)

ماہرین کے مطابق 2دن کے بعد رضاکاروں کو دوبارہ بلایا گیا اور ان سے یاد کی جانے والی تصاویر اور سبق کے بارے میں پوچھا گیا اور ان کے دماغ کے ایم آر آئی اسکین بھی لیے گئے، ان میں سے جن افراد نے 4گھنٹے بعد ورزش کی تھی انہوں نے 2روز بعد بھی یاد کی ہوئی باتیں اچھی طرح دہرائیں جب کہ ورزش نہ کرنے والوں کی کارکردگی بہت اچھی نہیں تھی۔ماہرین کا کہنا ہے کہ جانوروں پر کی گئی تحقیقات سے معلوم ہوتا ہیکہ ورزش سے دماغ کے اندر خاص کیمیکل خارج ہوتے ہیں جو یادداشت کو مضبوط بناتے ہیں۔ تحقیق کے بعد سائنسدان مشورہ دیتے ہیں کہ پڑھنے اور یاد رکھنے کے بعد ورزش کا عمل بہت مفید ثابت ہوسکتا ہے۔

Your Thoughts and Comments