قطر میں تمام دُکانیں اور کاروباری مراکز بند کر ا دیئے گئے

حکام کے مطابق 19 مئی سے 30مئی تک تمام کاروبار بند رہیں گے، پچھلے 24 گھنٹوں میں 1365 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے

Muhammad Irfan محمد عرفان منگل مئی 15:30

قطر میں تمام دُکانیں اور کاروباری مراکز بند کر ا دیئے گئے
دوحہ (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 19مئی 2020ء) قطر میں تمام دُکانیں اور کاروبار مراکز بند کر ا دیئے گئے۔ حکام کے مطابق 19 مئی سے 30مئی تک تمام کاروبار بند رہیں گے، البتہ فارمیسیز، فوڈ سپلائی اور ڈلیوری مراکز کو کام کرنے کی اجازت ہو گی۔دوسری جانب قطر میں کورونا وائرس کے مریضوں کی گنتی میں تیزی سے اضافہ ہونے لگا ہے۔ پچھلے 24 گھنٹوں میں کورونا کے ریکارڈ کیسز سامنے آئے ہیں۔

قطری وزارت 1365 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے،جس کے بعد گنتی 34 ہزار سے زائد ہو چکی ہے۔ جن میں سے 19 مریضوں کی حالت نازک ہے۔ وزارت صحت کے مطابق اس وقت مجموعی طور پر 172 مریض آئی سی یو میں داخل ہیں۔ 15 مریض کورونا کے باعث دم توڑ چکے ہیں۔ مملکت میں اس وقت ایکٹو کیسز کی مجموعی گنتی 29,055 ہے جبکہ 4899 افراد مکمل طور پر صحت یاب ہوچکے ہیں۔

(جاری ہے)

متاثرین میں غیر ملکیوں کی گنتی زیادہ ہے۔

واضح رہے کہ قطری حکومت نے کرونا وائرس سے بچاوٴ کے لیے تاحکم ثانی گھروں سے باہر نکلنے والے تمام افراد کے لیے چہرے پر ماسک پہننا لازمی قرار دے دیا تھا۔اس کی خلاف ورزی کے مرتکبین کو جیل اور 55 ہزار ڈالر تک جرمانے کی سزا ہوسکتی ہے۔ وزارت صحت کے مطابق مملکت میں اب تک مقامی اور تارکین وطن کے مجموعی طور پرایک لاکھ سے زائد ٹیسٹ لیے جا چکے ہیں۔

مملکت میں جو کورونا کے مریضوں کی گنتی میں بہت تیزی سے اضافہ ہوا ہے، یہ کیسز کے بلند ترین سطح پر ہونے کی نشانی ہے۔اس کے بعد آہستہ آہستہ مریضوں کی تعداد میں کمی واقع ہوتی نظر آئے گی۔ واضح رہے کہ قطری حکومت کی جانب سے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کی خاطر 17 مارچ کو مساجد کی وقتی بندش اور ان میں نماز پنجگانہ و نماز جمعہ کے اجتماعات پر بھی پابندی عائد کی تھی۔

مملکت میں کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے تمام غیر ضروری دُکانیں بند کروا دی گئی ہیں، اس کے علاوہ کیفے اور تفریحی آؤٹ لیٹس کھولنے پر بھی پابندی لگا دی گئی ہے۔ جو دُکانیں کھُلی رکھی گئی ہیں، ان کے اوقات بھی صبح 6 بجے سے شام 7 بجے تک مقرر کر دیئے گئے ہیں۔ ان اوقات کے علاوہ کسی کو دُکان کھلنے رکھنے کی اجازت نہیں ہو گی۔ البتہ فارمیسیز، کریانہ سٹورز اور ڈلیوری سٹورز پر اوقات کی کوئی پابندی نہیں لگائی گئی۔ انسانی حقوق کی عالمی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ خلیجی ریاست قطر میں کورونا وائر س کا سب سے بڑا نشانہ مزدور طبقہ بن رہا ہے۔ ایمنسٹی کی تازہ رپورٹ کے مطابق مملکت میں سینکڑوں مزدور کورونا وائرس کے باعث ہسپتال پہنچ چکے ہیں۔

دوحہ میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments