سعودی عرب میں اب ٹیکسی سڑک پر ہی نہیں، سمندر میں بھی چلے گی

جدہ میں 2 سال کے بعد سمندری ٹیکسی چلانے کی تیاریاں شروع ہو گئیں

Muhammad Irfan محمد عرفان جمعہ اگست 11:38

سعودی عرب میں اب ٹیکسی سڑک پر ہی نہیں، سمندر میں بھی چلے گی
جدہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین،23 اگست 2019ء) سعودی عرب میں اس وقت لاکھوں افراد روڈ ٹیکسی کے کاروبار سے وابستہ ہیں۔ تاہم اب جدہ کی میٹرو کمپنی کی جانب سے ایسا اعلان کیا گیا ہے جس نے سب کی توجہ اپنی طرف کر لی ہے۔ اب ٹیکسی کی سروس صرف سڑک پر ہی نہیں، بلکہ سمندری حدود میں بھی دستیاب ہو گی۔الوطن اخبار کی جانب سے شائع خبر کے مطابق اس سلسلے میں جدہ میٹرو کمپنی کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر اُسامہ ابراہیم عبدہ نے بتایا ہے کہ جدہ میں اگلے دو سال کے بعد سمندر میں ٹیکسی کا آغاز ہو جائے گا۔

یہ سمندری ٹیکسی جدہ کے شمالی اور وسطی علاقے کے درمیان چلائی جائے گی۔اس سروس کے 20 اسٹیشن ہوں گے۔ جس سے اندازاً یومیہ 29 ہزار مسافر مستفید ہوں گے۔ اس سروس کی بدولت جدہ کے بہت سے ساحلی علاقوں کا ایک دوسرے سے رابطہ بہتر ہو جائے گا۔

(جاری ہے)

ڈاکٹر عبدہ نے بتایا کہ اس منصوبے کو پُورا کرنے کی خاطر ایک اسپیشلسٹ پرائیویٹ کمپنی کو ٹیکسی اسکیم کا جائزہ تیار کرنے کا ٹھیکہ دیا گیا ہے۔

یہ منصوبہ تین مراحل میں پورا کیا جائے گا۔ پہلے مرحلے میں اس کی افادیت کی جائزہ رپورٹ تیار ہو گی۔ دوسرے مرحلے میں ٹینڈر طلب کیے جائیں گے جبکہ تیسرے مرحلے میں اس منصوبے پر عمل درآمد شروع ہو جائے گا۔ اس کے علاوہ بھی جدہ میں پبلک ٹرانسپورٹ کو بہتر بنانے کا منصوبہ تیار کیا گیا ہے۔ 36 ملین ریال کے اس منصوبے کے تحت کورنیش ٹرام، سمندری ٹیکسی اور ابحر پُل تعمیر ہوں گے۔ کورنیش ٹرام 15 کلومیٹر طویل روٹ پر چلے گی۔ جس سے ایک گھنٹے میں 2300افراد کو سفری سہولت مہیا ہو گی۔ جبکہ ابحر پر بنایا جانے والا پُل جنوبی ابحر کو شمالی ابحر سے ملائے گا۔ اس پُل کی لمبائی 350 میٹر ہو گی۔

جدہ میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments