مکہ کے قریب دو بسوں اور ٹرک میں تصادم، 18 زائرین زخمی

عرفات روڈ پر ہونے والے اس واقعے میں کئی افراد کی حالت تشویش ناک ہے

Muhammad Irfan محمد عرفان منگل نومبر 10:37

مکہ کے قریب دو بسوں اور ٹرک میں تصادم، 18 زائرین زخمی
مکہ مکرمہ (اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔5 نومبر 2019ء) مکہ معظمہ میں زائرین کی بسوں کو حادثہ پیش آیا ہے جس کے نتیجے میں 18 عمرہ زائرین زخمی ہو گئے ہیں، جن میں سے کئی افراد کی حالت تشویش ناک بتائی جا رہی ہے۔ حادثے کی اطلاع ملتے ہی محکمہ ٹریفک اور ہلال احمر کی ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں جنہوں نے زخمیوں کو فوری طور پر ہسپتال منتقل کر دیا ہے۔

سبق نیوز کے مطابق ہلال احمر مکہ کے ترجمان عبدالعزیز بادومان نے بتایا ہے کہ اس حادثے کی اطلاع ایک مقامی شہری نے دی تھی جس کے بعد فوری طور پر طبی امداد کی ٹیمیں جائے حادثہ پر روانہ کر دی گئیں۔ چھ زخمیوں کو النور ہسپتال جبکہ 10 زخمیوں کو شاہ فیصل ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔ ترجمان کے مطابق یہ حادثہ میدان عرفات کی زیارت کو جانے والی زائرین کی دو بسوں کو اُس وقت پیش آیا جب اُن کی ٹکر ایک ٹرک سے ہو گئی۔

(جاری ہے)

اس حادثے کی وجہ ڈرائیور کی غفلت بتائی جا رہی ہے، جس نے ٹریفک اصولوں کی خلاف ورزی کی۔ واضح رہے کہ 15 اکتوبر 2019ء کو ریاض سے مکہ مکرمہ جانے والی بس مدینہ منورہ سے 100 کلو میٹر دُور ’الحمنہ‘ کمشنری کے میں المناک حادثے کا شکار ہو گئی تھی۔ حادثے کے فوری بعد بس میں آگ بھڑ ک اُٹھنے سے 35 مسافر ہلاک اور 4 زخمی ہو گئے تھے۔پاکستانی قونصل خانے کی جانب سے بتایا گیا تھا کہ اس واقعے میں جاں بحق 9پاکستانیوں کی ڈی این اے کے ذریعے شناخت کر لی گئی۔

کیونکہ آتش زدگی کے دوران ان مسافروں کے شناختی کارڈز اور دیگر دستاویزات بھی جل کر راکھ ہو گئی تھیں۔شناخت کے بعد لواحقین کو اُن کے پیاروں کی لاشیں حوالے کر دی گئیں۔ اس حوالے سے وزارت صحت کا کہنا تھا کہ مسافروں کی شناختی دستاویزات جلنے کے بعد نعشوں کی شناخت صرف ڈی این اے کے ذریعے ہی ممکن ہو سکتی تھی۔

مکہ مکرمہ میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments