سعودی مساجد میں نماز عید کی تکبیریں بلند نہیں کی جائیں گی

مذہبی امور کی وزارت نے اخبارات میں شائع ہونے والی خبر کی تردید کر دی

Muhammad Irfan محمد عرفان جمعہ مئی 11:30

سعودی مساجد میں نماز عید کی تکبیریں بلند نہیں کی جائیں گی
ریاض(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 22مئی 2020ء) گزشتہ روز ایک سعودی اخبار میں یہ خبر شائع ہوئی تھی کہ وزارت اسلامی امور، دعوت و ارشادکی جانب سے تمام مساجد کے ائمہ کرام کو عید کے دن تکبیریں بلند کرنے کی ہدایت جاری کی گئی ہے۔ اس خبر پر لوگوں کی جانب سے بہت خوشی کا اظہار کیا گیا تھا۔ تاہم وزارت اسلامی امور کی جانب سے اس خبر پر ردِعمل سامنے آ گیا ہے۔

وزارت کے بیان میں کہا گیا ہے کہ مقامی اخبار میں مساجد میں نماز عید کی تکبیریں بلند کرنے کی خبر بنیاد ہے۔وزارت کی جانب سے مساجد کے ائمہ کو ایسی کوئی ہدایت جاری نہیں کی گئی۔ سب سے پہلے اس بے بنیاد خبر کو ایک مقامی اخبار نے شائع کیا، جس کی تصدیق کیے بغیر دیگر ویب سائٹس نے بھی اسے شائع کر دیا اور پھر یہ سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی۔

(جاری ہے)

اس خبر میں کوئی صداقت نہیں ہے۔

عوام صرف وزارت کی سرکاری ویب سائٹ سے ہی رجوع کیا کریں۔ واضح رہے کہ کچھ روز قبل سعودی پولیس نے سوشل میڈیا پر افواہیں پھیلانے والے ایک مقامی نوجوان کو گرفتار کیا تھا۔ اس نوجوان نے اپنی ویڈیو میں کہا تھا کہ سعودی حکومت نے مساجد کھولنے کا فیصلہ کر لیا ہے، اس حوالے سے جلد ہی تاریخ کا اعلان کر دیا جائے گا۔ جبکہ کرفیو کے اوقات میں بھی مزید نرمی کی جا رہی ہے۔

حرمین شریفین میں بھی نمازیوں کی آمد کا سلسلہ جلد شروع ہونے والا ہے۔ یہ ویڈیو چند گھنٹوں میں ہی سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی۔ ہر کوئی یہ سوال پوچھ رہا تھاکہ مساجد کب تک کھُل جائیں گی۔ تاہم چند صارفین نے اس ویڈیو کو پولیس کو رپورٹ کر دیا ۔ جس کے بعد پولیس نے اس نوجوان کی شناخت کرنے کے بعد اس کے گھر پر چھاپہ مار کر گرفتار کر لیا۔ ملزم کے خلاف افواہ سازی کے جرم میں مقدمہ درج کر کے اسے سرکاری استغاثہ کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ عدالت میں جرم ثابت ہونے پر ملزم کو قید اور لاکھوں ریال جرمانے کی سزا بھُگتنا ہو گی۔

ریاض میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments