جی جی سی کا اجلاس؛ حوثی حملوں کی مذمت، خطے میں امن و سلامتی کیلئے تعاون جاری رکھنے پر اتفاق

رکن ممالک نے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے ہرسطح پر یکجہتی اور تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا ، اجلاس میں مسئلہ فلسطین سے متعلق جی سی سی کے مشترکہ غیرمتزلزل مؤقف کا بھی اعادہ کیا گیا۔ اعلامیہ

Sajid Ali ساجد علی جمعہ 17 ستمبر 2021 10:36

جی جی سی کا اجلاس؛ حوثی حملوں کی مذمت، خطے میں امن و سلامتی کیلئے تعاون جاری رکھنے پر اتفاق
ریاض ( اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین ۔ 16 ستمبر2021ء ) خلیج تعاون کونسل کے اجلاس میں حوثی باغیوں کی مذمت کی گئی اور خطے میں امن و سلامتی کیلئے تعاون جاری رکھنے پر اتفاق ہوگیا ، مسئلہ فلسطین سے متعلق جی سی سی کے مشترکہ غیرمتزلزل مؤقف کا بھی اعادہ کیا گیا ، رکن ممالک نے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے ہرسطح پر یکجہتی اور تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا ۔ سعودی میڈیا کے مطابق سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں جی سی سی وزرائے خارجہ کا 149 واں اجلاس ہوا ، جس میں خلیجی ممالک کے وزرا شریک ہوئے جب کہ اجلاس میں وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے سعودی وفد کی قیادت کی ، اجلاس کے اختتام پر اعلامیہ بھی جاری کیا گیا ، جس میں کہا گیا ہے کہ اجلاس میں مشترکہ طورپر سعودی عرب پر حوثی باغیوں کے حملوں کی مذمت کی گئی ، جی سی سی نے خطے میں امن و سلامتی کے فروغ کے لیے کوششیں جاری رکھنے پر زور دیا ، اس موقع پر فلسطین کی حمایت کا بھی اعادہ کیا گیا ، یمن کے وزیر خارجہ نے حوثیوں کی مسلح بغاوت کو انسانی بحران وجہ قرار دیا اور کہا کہ حوثیوں کی بغاوت کے باعث یمن میں انسانی بحران پیدا ہوا۔

(جاری ہے)

بتایا گیا ہے کہ اجلاس میں جی سی سی ممالک نے حوثی باغیوں کے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے ریاض معاہدے پر عمل درآمد پر زور دیا اور اس دوران خلیجی وزرائے خارجہ نے یمن کی آئینی حکومت کی مکمل تائید اور حمایت کی ، اس کے علاوہ مسئلہ فلسطین سے متعلق جی سی سی کے مشترکہ غیرمتزلزل مؤقف کا اعادہ کیا گیا۔ اجلاس کے اختتام پر جارہ کردہ اعلامیہ سے معلوم ہوا ہے کہ جی سی سی اجلاس میں چند ہفتے قبل بحر عمان میں آئل ٹینکرپرحملوں کی بھی مذمت کی گئی اور رکن ممالک نے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے ہرسطح پر یکجہتی اور تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا۔

ریاض میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments