ابوظہبی میں سیلونز، بیوٹی پارلرز اور کاسمیٹک شاپس کو وارننگ جاری

صفائی سُتھرائی اور دیگر معیارات کی عدم پابندی پر 5 ہزار درہم کا بھاری جرمانہ ہو گا

Muhammad Irfan محمد عرفان بدھ مئی 11:23

ابوظہبی میں سیلونز، بیوٹی پارلرز اور کاسمیٹک شاپس کو وارننگ جاری
ابو ظہبی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین،15 مئی 2019ء) ابو ظہبی میونسپلٹی کی جانب سے رمضان المبارک کے مہینے میں دارالحکومت میں واقع تمام سیلونز، بیوٹی پارلرز اور کاسمیٹک شاپس کی کڑی نگرانی کی جا رہی ہے اور کسی خلاف ورزی کی صورت میں ان پر بھاری جرمانے عائد کیے جا رہے ہیں۔ میونسپلٹی کے اس حالیہ اقدام کا مقصد رمضان المبارک کے مہینے میں شہریوں کی صحت عامہ کا تحفظ اور بیماریوں سے بچاﺅ ہے۔

اس مقصد کے لیے ابو ظہبی شہر اور اس کے مضافات میں 40 انسپکٹرز کی ڈیوٹی لگائی گئی ہے جو سیلونز، بیوٹی پارلرز اور کاسمیٹک شاپس پر اچانک چھاپے مار رہے ہیں۔ میونسپلٹی کی جانب سے خبردار کیا گیا ہے کہ بیوٹی سیلونز زائد المیعاد کاسمیٹک مصنوعات، خطرناک کیمیکلز کے استعمال سے باز رہیں اور اپنے ہاں صفائی سُتھرائی کا خاص خیال رکھیں۔

(جاری ہے)

اگر کسی سیلون میں صحت اور صفائی کے ضوابط کی خلاف ورزی پائی گئی تو اُس پر جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

انسپکٹرز کی جانب سے مختلف مقامات پر زائد المیعاد کاسمیٹکس کے علاوہ کالی مہندی اور مضر صحت ڈائی کلرز کے استعمال، ہربل پراڈکٹس پر لیبل کے نہ ہونے، مصنوعات کے رکھنے کے لیے سٹوریج کا مناسب انتظام نہ ہونے اور آلات و اوزار کو ٹھیک طرح سے صاف نہ رکھنے جیسی خلاف ورزیوں پر جرمانے عائد کیے جا رہے ہیں۔ جبکہ یونیفارم کا استعمال نہ کرنے، ملازمین کے خود کے لیے حفاظتی آلات کی عدم موجودگی، گندے تولیے استعمال میں لانے اور دیگر اشیاءکی تھوڑے تھوڑے عرصے بعد صفائی سُتھرائی نہ کرنے کے باعث بھی جرمانے کیے جا رہے ہیں۔

میونسپلٹی کے مطابق یہ جرمانے چند سو درہم سے لے کر پانچ ہزار درہم تک کیے جا رہے ہیں۔ اتھارٹیز نے خبردار کیا ہے کہ کالی مہندی کا استعمال مضر صحت ہے، کیونکہ اس سے خواتین کی جلد پر الرجی کا خطرہ رہتا ہے۔

متعلقہ عنوان :

ابو ظہبی میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments