ابو ظہبی کی حکومت میں عوامی مفاد میں اہم ترین اعلانات کر دیئے

اگلے دو مہینوں کے دوران کسی کومالی معاملات پر قید کی سزا نہیں دی جائے گی، نہ کسی کا بینک اکاؤنٹ بلاک نہیں ہو گا، لیز پر لی گئی گاڑی ضبط نہیں کی جائے گیااور نہ ہی کسی کرایہ دار کو گھر یا دُکان سے بے دخل نہیں کیا جا سکے گا

Muhammad Irfan محمد عرفان پیر مارچ 16:33

ابو ظہبی کی حکومت میں عوامی مفاد میں اہم ترین اعلانات کر دیئے
ابوظہبی(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔23مارچ 2020ء) متحدہ عرب امارات میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران بہت ہنگامی نوعیت کے فیصلے لیے گئے ہیں جن میں تمام مقامی اور بین الاقوامی پروازوں کی بندش، عوامی مقامات پر لوگوں کے جانے کی ممانعت اور لوگوں کو گھروں میں ہی رہنے کی ہدایات شامل ہیں۔ ابو ظہبی کی حکومت نے عوامی مفاد میں چند اہم ترین اعلانات کر دیئے ہیں۔

ابو ظہبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زاید النہیان نے آج بروز سوموار ابو ظہبی کے جوڈیشل ڈیپارٹمنٹ کو حکم نامہ جاری کیا ہے کہ اگلے دو ماہ تک کے لیے کرایہ داری اور مالیاتی معاملات سے مقدمات کی سماعت روک دیں۔ حکم نامے کے مطابق اگلے ساٹھ روز کے دوران کسی بھی شخص کو مالیاتی معاملات یا فراڈ میں ملوث ہونے کے باعث قید کی سزا نہیں سُنائی جائے گی، کوئی بھی بینک کسی صارف کا اکاؤنٹ بلاک نہیں کرے گا، کریڈٹ کارڈ کے بل کی عدم ادائیگی پر قانونی کارروائی نہیں کی جائے گی، لیز پر لی گئی کار قسط کی رقم ادا نہ کرنے کی صورت میں ضبط نہیں کی جائے گی، نہ ہی کسی کرایہ دار کو دُکان یا گھر کا کرایہ ادا نہ کرنے صورت میں بے دخل کیا جائے گا۔

(جاری ہے)

اسی طرح کسی بھی بینک کے قرض نادہندہ کے مالی یا دیگر اثاثے ضبط کیے جائیں گے۔ تاہم نان و نفقہ اور آجر و اجیر کے درمیان تنازعات معمول کے مطابق نمٹائے جائیں گے۔ ابو ظہبی حکومت کی جانب سے اس فیصلے کا مقصد کورونا وائرس کے باعث پیدا ہونے والے معاشی بحران کے دوران مالی مشکلات کے شکار افراد کو ریلیف فراہم کرنا ہے۔واضح رہے کہ ماراتی وزارت داخلہ اور نیشنل ایمرجنسی اینڈ کرائسز اینڈ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کی جانب سے اماراتی شہریوں، سیاحوں اور تارکین وطن کے نام ایک پیغام جاری کیا گیا ہے جس میں انہیں تاکید کی گئی ہے کہ وہ کورونا وائرس کے خدشے کے پیش نظر گھروں میں رہیں،البتہ اگر کوئی انتہائی مجبوری درپیش ہو تو پھر ہی گھر سے باہر آئیں تاکہ وہ کورونا کی وبا سے محفوظ رہ سکیں۔

امارات کی سرکاری نیوز ایجنسی وام کی جانب سے ٹویٹر اکاؤنٹ پر پیغام جاری ہوا ہے جس میں اماراتی حکومت کی جانب سے عوام سے کہا گیا ہے کہ وہ گھروں پر ہی رہیں اور کسی اشد ضرورت کے وقت ہی گھر سے باہر نکلیں۔ اماراتی حکومت کا کہنا ہے کہ لوگ صرف خوراک، ادویہ اور دیگر انتہائی ضروری سامان خریدنے کے لیے ہی باہر نکلیں۔ زیادہ سے زیادہ وقت گھر پر ہی گزاریں تاکہ ان کی اور ان کے اہلِ خانہ کورونا کی وبا سے ممکنہ حد تک محفوظ رہ سکیں۔

حکومتی پیغام میں لوگوں کو یہ ہدایت بھی گئی ہے کہ باہر نکلتے وقت اپنی ذاتی کار کا استعمال کریں جس میں تین سے زائد افراد سفر نہ کریں۔ تمام افراد عوامی مقامات پر جانے سے گریز کریں اور خاندانی اجتماعات کے دوران دیگر افراد سے محفوظ فاصلہ رکھیں۔ پبلک ٹرانسپورٹ، ٹیکسیوں اور دیگر ٹرانسپورٹ گاڑیوں کے حوالے سے بھی آج ہدایات جاری کر دی جائیں گی۔ پیغام میں مزید کہا گیا ہے کہ گھر واپس آ کر سب سے پہلے ہاتھ دھوئے جائیں۔ اگر کسی بہت مجبوری کے باعث ہسپتالوں کا دورہ کرنا پڑجائے تو فیس ماسک ضرور پہنا جائے۔

ابو ظہبی میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments