ابو ظہبی: کم سن لڑکے نے فحش فلم دیکھنے کے بعد 4 سالہ کزن سے زیادتی کر ڈالی

بچی کو دھمکی دی تھی کہ اگر اُس بارے میں زبان کھولی تو وہ اُس کے والدین کو قتل کر دے گا

Muhammad Irfan محمد عرفان جمعرات مئی 11:52

ابو ظہبی: کم سن لڑکے نے فحش فلم دیکھنے کے بعد 4 سالہ کزن سے زیادتی کر ..
ابو ظہبی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین،16 مئی 2019ء) ابوظہبی کے رہائشی 15 سالہ لڑکے نے اپنی 4 سالہ خالہ زاد کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ تفصیلات کے مطابق بچی کی والدہ حاملہ تھی جس نے بچے کو جنم دینے کی خاطر اپنی چھوٹی بچی کو بہن کے گھر چھوڑا اور خود ہسپتال چلی گئی۔ وقوعے کے وقت چھوٹی بچی اور کم سن ملزم دونوں گھر پر اکیلے تھے۔معصوم بچی اُس وقت سو رہی تھی۔

جب ملزم اُس کے پاس آیا اور اُس نے خالہ کی بیٹی کی چھوٹی عمر کا لحاظ کیے بغیر اُسے شرمناک حرکت کر ڈالی۔ ملزم نے بچی کو دھمکی دی کہ اگر اُس نے اپنے والدین کو اس بارے میں کچھ بتایا تو وہ اُنہیں قتل کر ڈالے گا۔ جب بچی کی والدہ ایک بچے کو جنم دینے کے بعد اپنے خاوند کے ہمراہ واپس آئی تو انہیں بچی کے رویئے میں بہت زیادہ تبدیلی محسوس ہوئی وہ بہت ڈری ڈری لگتی تھی۔

(جاری ہے)

بچی سے جب انہوں نے وجہ پُوچھی تو اس نے ساری بات والد کو بتا دی۔ بچی کے والد نے جب ملزم سے پُوچھ گچھ کی تو اُس نے سارے واقعے سے انکار کر دیا۔ جس پر والد نے پولیس کو اطلاع کر دی۔ متاثرہ بچی کی والدہ نے بتایا کہ اُس نے اپنی بیٹی کو اپنی بہن کے گھر یہ خیال کر کے چھوڑا تھا کہ یہ اس کے لیے محفوظ ترین جگہ ہے۔ کم سن لڑکے نے پولیس کے رُوبرو اپنے جُرم کا اعتراف کر لیا۔ ملزم نے انکشاف کیا کہ اُس نے اپنے دوستوں کے ساتھ بیٹھ کر ایک فحش فلم دیکھی تھی جس کے بعد اُس نے فلم کے مناظر کو عملی رُوپ دینے کے لیے یہ سب حرکت کی۔ ملزم کے اعتراف کے بعد ملزم کو نابالغوں کی جیل میں منتقل کر دیا گیا جہاں اُس کا نفسیاتی علاج کیا جائے گا۔

دبئی میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments