دُبئی: پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور خاتون مسافر سے شرمناک حرکت پر گرفتار

ملزم کے مطابق اُسے لگا کہ غیر مُلکی خاتون اُس سے جنسی عمل کے لیے رضا مند ہے

Muhammad Irfan محمد عرفان منگل جون 14:20

دُبئی: پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور خاتون مسافر سے شرمناک حرکت پر گرفتار
دُبئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین،11جُون 2019ء) دُبئی پولیس نے ایک پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور کو خاتون مسافر کو جنسی ہراسگی کا نشانہ بنانے پر گرفتار کر لیا ہے۔ خاتون کی جانب سے درج کرائی گئی رپورٹ کے مطابق 25 سالہ پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور نے فلپائنی خاتون کے جسم کے مختلف حصوں پر ایک سے زائد بار ہاتھ پھیرتا رہا۔ اس واقعے کی رپورٹ جبلِ علی تھانے میں درج کرائی گئی۔

جس کے بعد ملزم کو گرفتار کیا گیا۔ 24 سالہ فلپائنی اکاﺅنٹنٹ نے بتایا کہ وہ رات پونے دس بجے جمیرہ لیکس ٹاورز سے ملزم کی ٹیکسی پر سوار ہوئی۔ میں ملزم کے ساتھ والی سیٹ پر بیٹھ گئی۔ مگر اُس وقت حیران رہ گئی جب وہ سیدھے راستے سے لے جانے کی بجائے سنسان سڑکوں پر ٹیکسی گھُمانے لگا۔ اچانک ملزم نے میری سیٹ پیچھے کو کر دی جس سے میں نیم دراز پوزیشن میں آ گئی۔

(جاری ہے)

مجھے لگا کہ اُس نے مجھے آرام دینے کی خاطر ایسا کیا ہے۔ تاہم چند لمحوں بعد اُس نے میرے جسم کے مختلف حصّوں کو چھُونا شروع کر دیا اور میرا چہرہ چُومنے کی بھی کوشش کی۔ جب میں نے مزاحمت کی تو اس ڈھیٹ ٹیکسی ڈرائیور نے کہا کہ اگر میں اُسے اپنے جسم کے ساتھ کھیلنے دوں تو وہ بدلے میں مجھ پندرہ درہم دے گا اور ساتھ ہی اپنی جیب سے پندرہ درہم نکال کر میری ران پر رکھ دی۔

میں خاموشی سے اس ساری شرمناک حرکت کی ویڈیو بناتی رہی۔ اس کے بعد میں گاڑی رُکوا کر باہر آئی اور اُس کی ٹیکسی کی نمبر پلیٹ کی تصویر بھی کھینچ لی اور وہاں سے سیدھا تھانے چلی گئی۔ اگلی روز مجھے ملزم کی شناخت کے لیے تھانے بُلایا گیا۔ ملزم کو شناخت کرنے کے بعد اُسے گرفتار کر لیا گیا۔ عدالت میں زیر سماعت اس مقدمے کا فیصلہ 20 جُون 2019ءکو سُنایا جائے گا۔

دبئی میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments