متحدہ عرب امارات میں 400سے زائد ٹیچرز نے استعفیٰ دے دِیا

استعفیٰ دینے والوں میں مقامی اور غیر مُلکی دونوں ٹیچرز شامل ہیں

Muhammad Irfan محمد عرفان جمعرات جولائی 14:39

متحدہ عرب امارات میں 400سے زائد ٹیچرز نے استعفیٰ دے دِیا
دُبئی ( اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین- 4 جُولائی 2019ء) متحدہ عرب امارات کی وزارت تعلیم نے 425 ٹیچرز اور دیگر انتظامی سٹاف کے استعفے منظور کر لیے ہیں جن میں مقامی اور غیر مُلکی مرد و خواتین شامل ہیں۔ چند روز قبل ان استعفیٰ دینے والے افراد کی فہرست سوشل میڈیا پر بھی وائرل ہوئی تھی، جس پر بہت سی افواہوں نے بھی جنم لیا۔ اکثر لوگوں کا خیال تھا کہ شاید یہ ٹیچرز وزارت کے رویئے سے نالاں ہو کر استعفیٰ دے رہے ہیں۔

تاہم وزارت کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ ان باتوں میں کوئی صداقت نہیں ہے۔ ہر سال سینکڑوں اساتذہ اپنی سروس کے اختتام پر یا گھریلو مجبوریاں کی بناء پر ملازمت چھوڑ دیتے ہیں۔ اس سال گزشتہ سال کی نسبت کم لوگوں نے درس و تدریس سے کنارہ کشی اختیار کی ہے۔ وزارت کے مطابق رواں برس 425 ٹیچرز نے ملازمت سے استعفیٰ دیئے جن میں غیر مُلکی افراد کی گنتی 177ہے جبکہ اماراتی افرادکی تعداد 248 ہے۔

(جاری ہے)

وزارت کے مطابق ملازمت کی مُدت ختم ہونے یا دیگر وجوہات کی بناء پر تدریس کا پیشہ چھوڑنے والوں میں ٹیچرز کے علاوہ دیگر انتظامی عملہ بھی شامل ہے۔ غیر مُلکی اور مقامی افراد پر مشتمل اس فہرست میں جو لوگ شامل ہیں انہوں نے کچھ عرصہ قبل استعفے جمع کرائے تھے جو وزارت کی جانب سے منظور کر لیے گئے ہیں۔ تاہم ان کی ملازمت کی ذمہ داریاں اُسی وقت ختم ہوں گی جب رواں تعلیمی سال کا اختتام ہو گا تاکہ سٹوڈنٹس اور اُن کی پڑھائی کا عمل متاثر نہ ہو۔

ملازمتیں چھوڑنے والے تمام لوگ اپنی مرضی سے جا رہے ہیں، وزارت کی جانب سے انہیں ملازمتوں سے قطعاً برخاست نہیں کیا گیا۔ 2017-18ء کے تعلیمی سال کے دوران وزارت تعلیم کی جانب سے ظاہر کردہ اعداد و شمار کے مطابق امارات بھر میں سرکاری اور نجی سکولوں میں ٹیچرز کی کُل گنتی 70,016 نوٹ کی گئی ہے۔

دبئی میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments