دُبئی: گاڑی پارک کرنے کے معاملے پر نوجوان نے خاتون کا ہاتھ توڑ دیا

ملزم نے خاتون کو زمین پر گرا کر تشدد کا نشانہ بنایا اوراس کے کپڑے بھی پھاڑ ڈالے

Muhammad Irfan محمد عرفان پیر جولائی 14:55

دُبئی: گاڑی پارک کرنے کے معاملے پر نوجوان نے خاتون کا ہاتھ توڑ دیا
دُبئی(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 8جولائی 2019ء ) دُبئی میں مقیم ایک غیر مُلکی نوجوان نے ایک کار پارکنگ میں موجود خاتون کو بدترین تشدد کا نشانہ بنا کر اُس کا ہاتھ توڑ ڈالا۔ پولیس نے اس بے رحمی کا مظاہرہ کرنے والے نوجوان کو گرفتار کر لیا۔ استغاثہ کے مطابق متاثرہ خاتون پارکنگ ایریا میں غلط لین میں چلی گئی تو اس نے گاڑی کو صحیح ڈائریکشن میں پار کرنے کے لیے ریورس کیا تو اُس کے پچھلی جانب گاڑی میں بیٹھا بے صبر نوجوان اپنی گاڑی پارک کرنے کے لیے ہارن پر ہارن دینے لگا۔

جس پر خاتون نے اُسے انتظار کرنے کو کہا۔ اس پر یہ نوجوان اشاروں سے خاتون کا مذاق اُڑانے لگا۔ عرب خاتون نے جب نوجوان کو ایسا کرتے دیکھا تو گاڑی سے باہر آ کر اُس کے پاس گئی اور پُوچھنے لگی کہ وہ اُس سے بدتمیزی کیوں کر رہا ہے۔

(جاری ہے)

جس پر یہ نوجوان بھی اپنی گاڑی سے باہر نکل آیا اور خاتون کو دھکا دے کر پرے کر دیا۔ خاتون نے نوجوان کی گاڑی کی نمبر پلیٹ کی اپنے موبائل فون سے تصویر کھینچنے کی کوشش کی تاکہ بعد میں پولیس کو شکایت درج کرا سکے۔

تاہم نوجوان نے اُسے ایسا کرتے دیکھ لیا اور اُسے زمین پر گرا کر اُس کی پٹائی شروع کر دی۔ اس شرم و حیا سے عاری مشتعل نوجوان نے اس دوران خاتون کے کپڑے بھی پھاڑ ڈالے اور اُس کا ہاتھ توڑ ڈالا۔ خاتون کے چیخ و پُکار کرنے پر وہاں لوگ جمع ہو گئے اور نوجوان کو روکنے کی کوشش کی تو وہ موقع سے فرار ہو گیا۔ بعد میں خاتون کو ہسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اُسے بتایا کہ اس حملے کے باعث اُس کے ہاتھ کی ہڈی ٹوٹ گئی ہے۔ خاتون نے عدالت میں بتایا کہ ہاتھ کی زخمی ہونے کی وجہ سے اُسے نوکری سے بھی نکال دیا گیا۔ شاپنگ مال کی پارکنگ میں نصب کلوز سرکٹ ٹی وی کیمرے کی ویڈیو بھی عدالت میں بطور ثبوت پیش کی گئی۔ اس واقعے کی اگلی سماعت کچھ روز کے لیے ملتوی کر دی گئی ہے۔

دبئی میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments