دُبئی میں مقیم افغانی بزنس مین نے نوکری کی تلاش میں آئی دوشیزہ سے زیادتی کر ڈالی

افغانی مالک نے نوجوان لڑکی کو اپنے ریسٹورنٹ میں نوکری کے بہانے بُلا کر اسے کنوار پن سے محروم کر دیا

Muhammad Irfan محمد عرفان پیر ستمبر 13:42

دُبئی میں مقیم افغانی بزنس مین نے نوکری کی تلاش میں آئی دوشیزہ سے زیادتی ..
دُبئی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین،2 ستمبر، 2019ء) دُبئی میں مقیم ایک افغانی بزنس مین کو پولیس نے الجزائری دوشیزہ سے جنسی زیادتی کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔ مقدمے کی سماعت کے دوران استغاثہ کی جانب سے بتایا گیا کہ 47 سالہ افغانی ملزم ال رِقہ کے علاقے میں اپنا ریسٹورنٹ چلاتا ہے۔ متاثرہ خاتون اس کے پاس پہلے بھی کام کرتی رہی تھی، مگر چھ ماہ پہلے اسے نوکری سے نکال دیا گیا۔

خاتون نے جب ریسٹورنٹ کی جانب سے دوبارہ نوکریوں کا اشتہار دیکھا تو ویٹرس کی نوکری کے لیے اپلائی کر دیا۔ جس پر افغانی بزنس مین نے اسے ریسٹورنٹ بُلا لیا۔ جہاں پر نوکری کے حوالے سے معاملات طے پا گئے۔ تھوڑی دیر بعد افغانی باس نے اُسے کہا کہ وہ اُس کے ساتھ کچھ ہی دُور واقع اس کے دفتر چلی جائے، تاکہ وہاں پر وہ اسے جاب لیٹر دے کر اس سے دستخط کروا لے۔

(جاری ہے)

الجزائری خاتون جونہی اس کے ساتھ رات دس بجے کے قریب دفتر میں داخل ہوئی تووہاں اور کوئی موجود نہ تھا۔ اچانک افغانی ملزم نے دفتر کے دروازے کو لاک کر دیا اور لڑکی کو زبردستی گلے لگا کر اس سے جنسی چھیڑ چھاڑ کرنے لگا۔ اس واقعے سے خاتون اتنی خوفزدہ ہو گئی کہ اپنی مدد کے لیے چیخ و پکار بھی نہ کر سکی۔ اس نے افغانی ملزم کی بہت منت سماجت کی کہ اس کے ساتھ غلط حرکات نہ کرے مگر اس پر کوئی اثر نہ ہوا۔

افغانی ملزم نے درندگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے خاتون کو کنوار پن سے محروم کر دیا۔ مجبور لڑکی نے جب اپنی مدد کے لیے چیخنے چِلانے کی کوشش کی تو ملزم نے اسے جان سے مارنے کی دھمکی دے کر خاموش کرا دیا۔ ملزم کی زیادتی کے نتیجے میں خاتون کی حالت بگڑ گئی۔ اس کے بعد ملزم نے خاتون کو چند پیسے دے کر بہلانے کی کوشش کی اور اسے کہا کہ وہ پریشان نہ ہو، وہ اس سے جلد شادی کر لے گا۔ خاتون نے باہر جا کر فوری طور پر پولیس کو اس معاملے سے آگاہ کر دیا۔ اس مقدمے کی اگلی سماعت 25 ستمبر 2019ء کو ہو گی۔

متعلقہ عنوان :

دبئی میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments