سعودی نوجوان نشے میں مست ہو کر ہوٹل میں مقیم خواتین کے کمرے میں گھُس گیا

عیاش نوجوان نے وہاں موجود ایک لڑکی سے اکٹھے شاور لینے کی فرمائش بھی کر ڈالی

Muhammad Irfan محمد عرفان جمعرات اکتوبر 12:30

سعودی نوجوان نشے میں مست ہو کر ہوٹل میں مقیم خواتین کے کمرے میں گھُس ..
دُبئی(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔10 اکتوبر2019ء) دُبئی پولیس نے ایک سعودی نوجوان کو شراب پی کر نازیبا حرکات کرنے اور خواتین کو جنسی ہراسگی کا نشانہ بنانے پر گرفتار کر لیا ہے۔ استغاثہ کی جانب سے بتایا گیا کہ 21 سالہ نوجوان ایک ہوٹل کے باہر نشے کی حالت میں کھڑا تھا۔ جب اس نے تین غیر مُلکی خواتین کو ہوٹل میں داخل ہوتے دیکھا۔ نوجوان کی ان خواتین پر نیت خراب ہو گئی۔

وہ بھی ان کے پیچھے پیچھے ہوٹل میں داخل ہو گیا۔ تینوں خواتین ہوٹل میں لیے گئے اپنے کمرے میں گئیں تو یہ بھی اُن کے پیچھے پیچھے اندر گھُس آیا۔ متاثرہ خواتین میں سے ایک 23 سالہ سویڈش خاتون نے بتایا کہ وہ اپنی ہم وطن سہیلی کے ساتھ سُپر مارکیٹ سے شاپنگ کر کے رات دس بجے واپس آئی۔ ابھی ہم کمرے میں داخل ہوئے ہی تھے کہ ایک نامعلوم نوجوان بھی ساتھ ہی اندر داخل ہو گیا۔

(جاری ہے)

یہ نوجوان یوں ظاہر کرنے لگا کہ جیسے یہ اسی کا کمرہ ہے۔ اس نوجوان نے داخل ہوتے ہی کہا کہ وہ اپنے لیے کافی کا کپ بنائے گا اور ساتھ ہی ہمیں پوچھنے لگا کہ ہم کہاں سے آئی ہیں اور اس کے کمرے میں کیا کر رہی ہیں۔ ہم اس صورتِ حال پر پریشان ہو گئیں۔ اچانک نوجوان کمرے میں موجود 23 سالہ تُرکی سہیلی کے ساتھ نازیبا حرکات کرنے لگا۔ اس نے لڑکی کو زبردست پکڑ اسے چُومنے کی کوشش کی اور اس سے فرمائش کی کہ وہ اس کے ساتھ اکٹھے شاور لے۔

تاہم ہم تینوں لڑکیوں نے مِل کر اس گندی نیت والے نوجوان کو لاتیں مار کر کمرے سے باہر نکال دیا۔ اس نوجوان نے دوبارہ کمرے کے باہر دی گئی بیل بجا کر اندر آنے کی کوشش کی مگر ہم نے اس کے شور مچانے کے باوجود دروازہ نہ کھولا۔ اس واقعے کی رپورٹ البرشا پولیس اسٹیشن میں درج کروائی گئی۔ نوجوان نے دورانِ تفتیش اعتراف کیا کہ وہ نشے کی حالت میں تھا اور اس نے ایک خاتون کو جنسی ہراسگی کا نشانہ بنایا۔ اس مقدمے کا فیصلہ 22 اکتوبر کو سُنایا جائے گا۔ جس میں ملزم کو سزا ملنے کا بھرپور امکان ہے۔

متعلقہ عنوان :

دبئی میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments