Hazrat Huzaifa RA Se Jasusi Ka Waqea Sun Kar

حضرت حذیفہ رضی اللہ عنہ سے جاسوسی کا واقعہ سن کر

حضرت حذیفہ رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ غزؤہ خندق کے موقع پر نبی ﷺ نے مجھے کفار کے لشکر کی خبر کے لیے بھیجا۔گھبراہٹ،خوف اور سردی کے باوجود میں فوراََ اُٹھ کر چل دیا اور جاتے قوت نبیﷺ نے مجھے یہ دعا دی:

Hazrat Huzaifa RA Se Jasusi Ka Waqea Sun Kar
حضرت حذیفہ رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں کہ غزؤہ خندق کے موقع پر نبی ﷺ نے مجھے کفار کے لشکر کی خبر کے لیے بھیجا۔گھبراہٹ،خوف اور سردی کے باوجود میں فوراََ اُٹھ کر چل دیا اور جاتے قوت نبیﷺ نے مجھے یہ دعا دی:
”اے اللہ! اس کی حفاظت فرما،سامنے پیچھے سے،دائیں سے،بائیں سے،اوپرسے اور نیچے سے۔“
حضرت حذیفہ رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ آپﷺ نے مجھے دعا فرمائی تو میرے دل سے خوف جاتارہا۔
سردی کا احساس بھی نہ رہا اورہر قدم پر یوں معلوم ہوتا تھا جیسے میں گرمی کے موسم میں چل رہا ہوں۔
میری روانگی کے وقت نبیﷺ نے مجھے یہ تاکید فرمائی تھی کہ:
”اس دوران میں کوئی حرکت نہ کرنا۔خاموشی سے حالات دیکھ کر واپس چلے آنا:“
جب میں کفار کے لشکرمیں پہنچا تو دیکھاکہ آگ جل رہی ہے اور لوگ آگ تاپ رہے ہیں۔

ابوسفیان بھی جو لشکر کا سردار تھا۔

آگ تاپ رہا تھا۔
میں نے دل میں سوچا کہ یہ بہترین موقع ہے ابو سفیان کا خاتمہ کردوں۔میں نے اپنے ترکش سے تیر نکال کر کمان پر رکھ لیالیکن پھر نبیﷺ کا ارشاد مبارک یاد آگیا کہ کوئی حرکت نہ کی جائے اس لیے میں نے ابو سفیان کو قتل کرنے کا ارادہ ترک کردیا۔
اس وقت لشکر والوں کا حال یہ تھا کہ ہر طرف وے واپس چلو،واپس چلو کی آوازیں آرہی تھیں۔
کیونکہ شدید آندھی سے ان کے خیموں پر ریت اور کنکروں کی بارش ہورہی تھی۔خیموں کی طنابیں ٹوٹ رہی تھیں اور گھوڑوں اور اونٹوں کی حالت بدتر تھی۔لشکروالواں کو میرے بارے میں شبہ ہوا کے شاید جوئی جاسوس ہے۔ہرشخص اپنے برابر والے کا ہاتھ پکڑ کر پوچھتا تو کون ہے؟ وہ بولا،واہ تم مجھے نہیں جانتے میں فلاں بن فلاں ہوں۔واپس آکرمیں نے نبیﷺ کو کفارکے لشکر کو پوری صورتِ حال سے آگاہ کیا۔
آپﷺ اُس وقت نماز سے فارغ ہوچکے تھے۔آپﷺ نے میری ساری رائیدادسن کر خوشی کا اظہار فرمایا۔اور اس وقت آپﷺ کے دندانِ مبارک بھی مسرت سے چمک رہے تھے۔
اس کے بعد نبیﷺ نے مجھے اپنے پاؤں کے قریب لٹا لیا اور اپنی چادر کا کچھ حصہ میرے اُوپر ڈال دیا۔میں نے اپنے سینے کو نبی ﷺ کے پاؤں کو تلوؤں سے چمٹائے رکھا۔

Your Thoughts and Comments