Hazrat Umer RA Ki Hikmat Bhari Baat Sun Kar

حضرت عمر رضی اللہ عنہ کی حکمت بھری بات سن کر

حضرت جابر رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں کہ ایک مرتبہ حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ تشریف لائے اور انہوں نے نبیﷺ کے پاس جانے کے لیے اجازت مانگی مگر اُن کو اجازت نہ ملی۔

Hazrat Umer RA Ki Hikmat Bhari Baat Sun Kar
حضرت جابر رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں کہ ایک مرتبہ حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ تشریف لائے اور انہوں نے نبیﷺ کے پاس جانے کے لیے اجازت مانگی مگر اُن کو اجازت نہ ملی۔
پھر حضرت عمررضی اللہ عنہ تشریف لائے،انہوں نے بھی اجازت مانگی تو ان کو بھی اجازت نہ ملی۔
کچھ دیر بعد دونوں کو اندر آنے کی اجازت مل گئی تو یہ دونوں حضرات اندر تشریف لے گئے۔
وہاں کیا دیکھتے ہیں کہ نبیﷺ تشریف فرما ہیں اور آپﷺ کے اردگرد آپﷺ کی ازواج مطہرت جمع ہیں اور آپﷺ خاموش ہیں۔
حضرت عمر رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ میں نے (اپنے جی میں)کہا کہ میں ضرور کوئی ایسی بات کروں گا جس سے نبیﷺ ہنس پڑیں گے۔
یارسول اللہ! اگر آپﷺ زید رضی اللہ عنہ کی بیٹی(حضرت عمررضی اللہ عنہ کی بیوی) کو دیکھتے جو ابھی ابھی مجھ سے نان ونفقہ کا مطالبہ کر رہی تھی۔

میں اسے پکڑا اور اُس کا گلا دبا دیا۔
یہ سن کر آپﷺ اس قدر ہنسے کہ آپﷺ کی داڑھیں دکھائی دینے لگیں۔
پھر آپ ﷺ نے فرمایا:
”یہ سب میرے اردگرد جمع ہیں اور مجھ سے نان ونفقہ مانگ رہی ہیں!“
یہ سن کر حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کی طرف بڑھے تاکہ اُسے ماریں اور حضرت عمر رضی اللہ عنہ حضرت حفصہ رضی اللہ عنہا کی جانب لپکے تاکہ اُسے ماریں۔یہ دونوں حضرات کہہ رہے تھے۔
کیا تم نبیﷺ سے وہ چیزیں مانگ رہی ہو جو آپﷺ کے پاس نہیں ہیں؟
یہ صورت حال دیکھ کر تمام ازواج مطہرت نے کہا:
ہم آئندہ نبیﷺ سے کوئی ایسی چیز نہ مانگیں گی جو آپﷺ کے پاس نہ ہو۔

Your Thoughts and Comments