Shaitan K Apnay Sar Par Matti Daalnay Par

شیطان کے اپنے سَر پر مٹی ڈالنے پر

حضرت عباس بن مرداس رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں کہ نبیﷺ نے حج کے موقع پر عرفات میں اپنی امت کے لیے رحمت اور مغفرت کی بہت زیادہ دعا کی ۔اللہ تعالیٰ نے آپﷺ پر وحی بھیجی کہ بے شک میں نے ایسا کردیا۔

Shaitan K Apnay Sar Par Matti Daalnay Par
حضرت عباس بن مرداس رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں کہ نبیﷺ نے حج کے موقع پر عرفات میں اپنی امت کے لیے رحمت اور مغفرت کی بہت زیادہ دعا کی ۔اللہ تعالیٰ نے آپﷺ پر وحی بھیجی کہ بے شک میں نے ایسا کردیا۔(جس طرح آپﷺ نے دعا مانگی)مگر ایک دوسرے پرکیا ہوا ظلم معاف نہیں کیا۔جو گناہ میرے اور میرے بندوں کے درمیان تھے وہ میں نے معاف کر دیے۔اس پر نبیﷺ نے عرض کیا:
”اے رب!بے شک تو اس پر قادر ہے کہ مظلوم کو ثواب دے اور ظالم کو معاف کردے“
مگر اس موقع پر آپﷺ کی یہ دعا قبول نہ ہوئی۔


پھرجب مزدلفہ میں صبح ہوئی تو آپﷺ نے پھر یہی دعا فرمائی تو
اللہ تعالیٰ نے آپﷺ کی دعا قبول فرمالی کہ بے شک میں نے ظالم کی بھی مغفرت کردی۔
اس پر نبیﷺ مسکرادیے۔
صحابہ کرام نے عرض کیا:یارسول اللہ! آپﷺ ایسے وقت ،مسکرائے جب آپﷺ مسکرایا نہیں کرتے تھے؟
آپﷺ نے فرمایا:
میں اللہ کے دشمن ابلیس پر مسکرایا۔جب اُسے معلوم ہوا کہ اللہ تعالیٰ نے میری امت کے بارے میں میری دعا قبول فرمالی تو وہ ہائے خرابی،ہائے بربادی کہہ کر پکارا اور اُس نے اپنے سر پر مٹی ڈالی۔

Your Thoughts and Comments