Anna Molka Ahmed Ka Fan - Article No. 1872

اینا مولکا احمد کا فن

اینا مولکا احمد مصوری سیکھنا چاہتی تھیں اور اسی لئے لندن میں انھوں نے رائل اکیڈمی آف آرٹس میں داخلہ لیا

جمعرات جنوری

Anna molka ahmed ka fan
یہ خاتون 13 اگست 1917ء میں برطانیہ کے دارالحکومت لندن میں پیدا ہوئیں۔پُرسکون زندگی گزار رہی تھیں،مگر ایک دن اپنی اس آرام دہ زندگی کو چھوڑ کر وہ اپنی باقی زندگی پاکستان میں بسر کرنے چلی آئیں۔اینا مولکا احمد مصوری سیکھنا چاہتی تھیں اور اسی لئے لندن میں انھوں نے رائل اکیڈمی آف آرٹس (Royal Academy Of The Arts) میں داخلہ لیا۔
وہیں انھوں نے اپنا شریک حیات چن لیا اور پھر ان ہی کے ساتھ وہ لاہور منتقل ہو گئیں۔اینا کو فنون لطیفہ میں اتنی دلچسپی تھی کہ جلد ہی انھوں نے پنجاب یونیورسٹی میں شمولیت اختیار کی اور پھر وہاں فائن آرٹس کا شعبہ قائم کیا جو کہ اب یونیورسٹی آف آرٹس اینڈ ڈیزائن میں تبدیل ہو چکا ہے۔

1940ء میں وہ اس یونیورسٹی کے فائن آرٹس ڈیپارٹمنٹ کی پہلی سربراہ بنیں۔

(جاری ہے)

30 برس تک انھوں نے پاکستان میں فنون لطیفہ کی تعلیم کے فروغ کے لئے بے پناہ کام کیا۔ انھوں نے پاکستان میں پہلی بار مصوری کی نمائش منعقد کی۔ان کے کئی شاگردوں نے پاکستان بھر کی کئی یونیورسٹیوں میں فنون لطیفہ کے شعبے قائم کیے۔

اینا اپنی تصویروں کے ذریعے یورپی اسٹائل اور پاکستانی تاثر کی نمائش کرتی رہیں۔
اینا مولکا احمد ایک بہترین استاد تھیں۔انھوں نے پہلی بار اپنے شاگردوں کو کالج سے باہر لے جا کر قدرتی ماحول میں مصوری کا موقع دیا۔ گوکہ 20 اپریل 1994ء میں ان کا انتقال ہو گیا،مگر وہ آج بھی اپنے شاگردوں کی یادوں کا حصہ ہیں،کئی شاگرد اب پاکستان کے نامور مصور بن چکے ہیں۔

مزید سو بڑے لوگ

Syed Ahmad Khan

سید احمد خاں

Syed Ahmad Khan

Hazrat Abu Bakar Siddique RTA

حضرت ابو بکر صدیق رضی اللہ تعالیٰ عنہ

Hazrat Abu Bakar Siddique RTA

Hazrat Hussain RTA

حضرت حسین رضی اللہ تعالیٰ عنہ

Hazrat Hussain RTA

Florence Nightingale

فلارنس نائٹ انگیل

Florence Nightingale

Jalal Uddin Muhammad Akbar

جلال الدین محمد اکبر

Jalal Uddin Muhammad Akbar

مامون الرشید

Mamoon Al Rasheed

Johann Wolfgang Von Goethe

جان وولفگینگ وان گوئٹے

Johann Wolfgang Von Goethe

Qoum Ki Maan

قوم کی ماں

Qoum Ki Maan

Saadi Shirazi RA

سعدی شیرازی رحمۃ اللہ علیہ

Saadi Shirazi RA

Mirza Adeeb

میرزا ادیب

Mirza Adeeb

Hazrat Nizam Uddin Auliya RA

حضرت نظام الدین اولیا رحمۃ اللہ علیہ

Hazrat Nizam Uddin Auliya RA

Franklin Delano Roosevelt

فرینکلن ڈیلانو روزویلٹ

Franklin Delano Roosevelt

Your Thoughts and Comments