Barati Ghora - Joke No. 1492

باراتی گھوڑا - لطیفہ نمبر 1492

ایک گھوڑا جب چلتے چلتے رک جاتا تو کو چوان اتر کر اس کے سامنے گانا گاتا۔ گانا سن کر گھوڑا پھر چلنے لگتا۔ آخر تنگ آکر تا نگے میں بیٹھی ہوئی سواری نے کو چوان سے پوچھا۔ ”بھئی یہ کیا قصہ ہے۔ تمہارا گھوڑا گانا سن کر کیوں چلتا ہے؟“ کوچوان بولا۔ ”بابو جی! یہ دراصل باراتی گھوڑا ہے۔“

مزید لطیفے

استاد

Ustaad

ملزم کی عمر

Mulzim Ki Umar

جہنم

Jahanum

ایک چھوٹی لڑکی

Aik choti larki

ایک عورت

Aik Aurat

گڈو اپنے باپ سے

guddu apne baap se

ایک بچہ رو رہا تھا

Aik Bacha Ro Raha Tha

میز ویز ، کرسی ورسی،پلنگ ولنگ وغیرہ وغیرہ

maize ways, kursi vurse, palang valang wager wager

شاہجہان کی وفات

shahjahan ki wafat

بول چال بند

Bol Chal Band

جوتوں کی دوکان

jooton ki dokaan

باراتی گھوڑا

Barati Ghora

Your Thoughts and Comments