Borhi Aurat - Joke No. 492

بوڑھی عورت - لطیفہ نمبر 492

ایک بوڑھی عورت نیند نہ آنے کے مرض میں گرفتار تھی ڈاکٹروں سے مایوس ہو کر وہ ایک ماہر ہپناٹزم کے پاس گئی وہ بھی انہیں بٹھا کر بہت دیر تک ”آپ سو رہی ہیں‘ آپ کو نیند آ ہی ہے‘ وغیرہ کہتا رہا مگر بات نہ بنی۔ بالآخر اس نے پسینہ پونجھتے ہوئے کہا:”میں معافی چاہتا ہوں خاتون میں آپ کو سلانے میں نا کام رہا“۔ اس بات پر بوڑھی عورت نے کہا:”خیر تم بالکل نا کام بھی نہیں ہوئے کم از کم میری ٹانگیں سو گئی ہیں“۔

مزید لطیفے

استاد

Ustaad

وکیل

Wakeel

ماں بیٹے سے

Maa bete se

ایک دوست دوسرے سے

Aik dost doosre se

عزیز کی عیادت

aziz ki ayadat

سپاہی عورت سے

sipahi aurat se

عظیم انگریزی مصنف

Azeem angrez musanif

خریدار

kharidaar

پاگل پائلٹ

pagal pilot

اسلام آباد سے لاہور

Islamabad se lahore

ساڑی

Sarhi

ایک بچہ دوسرے بچے سے

ek bacha Dusre bache se

Your Thoughts and Comments