Borhi Aurat - Joke No. 492

بوڑھی عورت - لطیفہ نمبر 492

ایک بوڑھی عورت نیند نہ آنے کے مرض میں گرفتار تھی ڈاکٹروں سے مایوس ہو کر وہ ایک ماہر ہپناٹزم کے پاس گئی وہ بھی انہیں بٹھا کر بہت دیر تک ”آپ سو رہی ہیں‘ آپ کو نیند آ ہی ہے‘ وغیرہ کہتا رہا مگر بات نہ بنی۔ بالآخر اس نے پسینہ پونجھتے ہوئے کہا:”میں معافی چاہتا ہوں خاتون میں آپ کو سلانے میں نا کام رہا“۔ اس بات پر بوڑھی عورت نے کہا:”خیر تم بالکل نا کام بھی نہیں ہوئے کم از کم میری ٹانگیں سو گئی ہیں“۔

مزید لطیفے

باپ بیٹے سے

Baap betai sai

ایک شخص بہت کم گو تھا

Aik Shakhs bohat kam go thaa

بھکاری

bhikari

دو ڈاکٹروں کی آمنے سامنے دکانیں تھیں

do doctoron ki amnay samnay dukanain theen

کلاس میں دو لڑکے

classe mein do larke

بادشاہ

Badshah

سکول

School

ایک راہ گیر

aik raah geer

ایک دوست دوسرے سے

Aik Dost dusre dost se

گدھے کا گوشت

gadhe ka gosht

پانچ تاریخ

paanch tareekh

تین دوست

Teen dost

Your Thoughts and Comments