Jooton Ki Dokaan - Joke No. 1117

جوتوں کی دوکان - لطیفہ نمبر 1117

جوتوں کی دوکان کا پوسٹر ایک دیوار پر چسپاں کیا گیا۔ چند دن بعد کسی نے اس پر نجی کلینک کا پوسٹر لگا دیا۔ کچھ دنوں بعد بارش کے سبب اوپر والا پوسٹر جگہ جگہ سے پھٹ گیا اور پڑھنے والے کو کچھ یوں عبارت دکھائی دینے لگی۔ ”ہمارے ہاں مریضوں کی خصوصی مرمت کی جاتی ہے۔ جوتوں کو چیچک کے ٹیکے مفت لگائے جاتے ہیں اور مریضوں کو تندرست رہنے کے لیے ایک سالہ گارنٹی دی جاتی ہے۔“

مزید لطیفے

فلسفی

Falsfi

قومی ترانہ

Qomi Tarana

روشن

Roshan

بھیک

bheek

بیوی دکاندار سے

biwi dukandar se

چائے پارٹی

chay party

ایک غیر ملکی پاکستان میں

aik ghair mulki Pakistan mein

استاد

Ustaad

جارج برنارڈ شاہ

george bernard Shah

خواب

Khawab

میزبان

maizban

ڈیڈی

Dady

Your Thoughts and Comments