Judge - Joke No. 450

جج - لطیفہ نمبر 450

کوئی چور مکان میں داخل ہوا تو اس نے تجوری پر لکھا ہوا دیکھا”دائیں طرف لگے ہوئے بٹن کو دباےئے تو تجوری خود بخود کھل جائے گی“۔ چور نے اس ہدایت پر عمل کیا اور بٹن پر ہاتھ رکھا ہی تھا کہ سائرن بج پڑا اور چور پکڑا گیا عدالت میں جج نے چور سے پوچھا”کیا تم اپنی صفائی میں کچھ کہنا چاہتے ہو؟“۔ چور نے اداس سی حالت میں موجود لوگوں کو دیکھا اور کہا:”میں اس سے زیادہ کچھ نہیں کہہ سکتا کہ دنیا بڑی دھو کے باز ہو گئی ہے“۔

مزید لطیفے

باپ بیٹے سے

Baap bete se

پہلا طالبعلم

pehla talib e ilm

ایک دیہاتی

aik dehati

دادا

Dada

ایک شرابی

aik sharabi

سپاہی

Sipahi

ایک چھوٹے قد

aik chhootey qad

صحیح عمر

sahih Umar

واپسی کی شرط

wapsi ki shart

نظر کمزور

Nazar kamzor

ایک شعبدہ باز

aik shobadaa baz

پٹرول کا گیلن

petrol ka gallon

Your Thoughts and Comments