Mujhe Paise Ki Kya Parwah - Joke No. 1134

مجھے پیسے کی کیا پرواہ - لطیفہ نمبر 1134

”مجھے پیسے کی کیا پرواہ! پیسہ تو ہاتھ کا میل ہے۔“ محمود نے یہ کہتے ہوئے جیب سے سو کا ایک نوٹ نکالا اور ماچس کی تیلی سے جلا کر راکھ کر دیا۔ یہ دیکھ کر سلیم نے کہا۔ ”بس اتنی سی ہمت تھی مجھے دیکھو۔“ اس نے چیک بک نکالی اور دس ہزار کا چیک کاٹا‘ دستخط کئے اور جلا کر ہوا میں اڑا دیا۔

مزید لطیفے

لکڑی کا ہاتھ

Lakdi Ka Hath

شادی

Shaadi

عادت

Aadat

ایک دوست

Aik dost

مقدمہ

muqadma

بیٹا باپ سے

Beta baaap se

بینک نمبر تین

Bank No 3

ہندوستان کی تقسیم سے

Hindustan ki taqseem se

ایک فلم ڈائریکٹر

aik film director

جہنم

Jahanum

قابل داد

Qabil e Daad

خوشگوار انجام

Khushgawar anjam

Your Thoughts and Comments

>