Rahgir Aur Sheikh Sahab - Joke No. 1358

راہ گیر اور شیخ صاحب - لطیفہ نمبر 1358

ایک راہ گیر نے شیخ صاحب کے مکان کی کنڈی بجائی شیخ صاحب نے باہر نکل کر راہ گیر کو حیرت سے دیکھتے ہوئے کہا۔ ”فرمائیے کیسے رحمت فرمائی۔ “ راہ گیر: جناب آپ اپنے لڑکے کو سمجھائیے۔ شیخ صاحب: کیا سمجھاؤں؟ راہ گیر: کہ وہ راہ گیروں پر پتھراؤ نہ کرے۔ وہ کئی مرتبہ مجھے مار چکا ہے، مگر میں ہر بار بچ گیا۔ شیخ صاحب:اگر آپ بچ گئے ہیں تو پتھراؤ کرنے والا میرالڑکا نہیں ہو سکتا ۔”وہ کوئی اناڑی ہوگا۔“

مزید لطیفے

ڈاکڑ

Doctor

ماں بیٹے سے

Maa bete se

مالک مکان

maalik makaan

ڈاکٹر حادثے میں

Dr hadse main

بخار اور دانت

bukhar aur dant

ساہیوال

Sahiwal

دیہاتی

Dehati

شکایت کا خط

Shikayat ka khat

آزادی کے لیے قربانی

azadi ke liye qurbani

ایک صاحب اپنے

AIk sahib apne

آدمی اور اجنبی

Aadmi Aur Ajnabi

مالک مکان

Malik Makaan

Your Thoughts and Comments