Suit - Joke No. 962

سوٹ - لطیفہ نمبر 962

ایک دولت مند بہت بیمار تھا۔ جب اس کے آخری لمحات قریب آ گئے تو اس کی بیوی پلنگ کے پاس گھڑی ہو گئی اور روتے ہوئے بولی۔ ”تم ابھی نہیں مر سکتے۔ خدا کے لئے ابھی نہ مرو“ مرتے ہوئے شخص نے کہا۔ ”بیگم مت رو صبر کرو میں ابھی مزید چند لمحوں کا مہمان ہوں“ نہیں نہیں تم آج مر کر مجھے ذلیل نہیں کر سکتے۔ بیگم نے جواب دیا۔ ”میں نے تمہارے سوگ میں پہننے والا سوٹ درزی کو دیا ہے۔ وہ کل ملے گا۔“

مزید لطیفے

قابل داد

Qabil e Daad

”امی“

Ami

کنجوس زمیندار

Kanjoos zimidaar

بیٹا باپ سے

Beta baap se

کار ڈرائیو

car driver

الارم سسٹم

Alarm system

ایک سکھ

Aik sikh

بڑھاپا

burhapa

آدمی بچے سے

aadmi bachay se

پولیس

Police

ایک جہاز کے ڈوبنے کا خطرہ

aik jahez ke doobne ka khatra

سیٹھ

Saith

Your Thoughts and Comments