Suit

سوٹ

ایک دولت مند بہت بیمار تھا۔ جب اس کے آخری لمحات قریب آ گئے تو اس کی بیوی پلنگ کے پاس گھڑی ہو گئی اور روتے ہوئے بولی۔ ”تم ابھی نہیں مر سکتے۔ خدا کے لئے ابھی نہ مرو“ مرتے ہوئے شخص نے کہا۔ ”بیگم مت رو صبر کرو میں ابھی مزید چند لمحوں کا مہمان ہوں“ نہیں نہیں تم آج مر کر مجھے ذلیل نہیں کر سکتے۔ بیگم نے جواب دیا۔ ”میں نے تمہارے سوگ میں پہننے والا سوٹ درزی کو دیا ہے۔ وہ کل ملے گا۔“

Your Thoughts and Comments