Szai Mot

سزائے موت

سزائے موت کے مجرم کو بجلی کی کرسی پر بٹھا کر سزائے موت دی جا رہی تھی بجلی کا بٹن دبانے والے نے آخری وقت مجرم سے پوچھا ”تمھاری آخری خواہش کیا ہے؟“۔ مجرم نے جواب دیا:”میرا ہاتھ پکڑ لو“۔

Your Thoughts and Comments