Kharab Halat

خراب حالات

جمعرات جنوری

ایک ناکام مضمون نگار درخوستیں اور خط لکھنے میں ماہر تھے۔ ایک بزرگ ان کے پاس گئے اور کہا کہ صدر صاحب کے نام میری طرف سے خط لکھو اور انہیں میری حالت سے آگاہ کرو۔

(جاری ہے)

خط لکھنے کے بعد مضمون نگار نے بزرگ کو خط پڑھ کر سنایا۔ سن کر وہ رونے لگے ۔ مضمون نگار نے حیرت سے پوچھا:”باباجی! کیا بات ہے؟“ بزرگ بولے:”بیٹا! مجھے خود معلوم نہیں تھا کہ میرے حالات اتنے خراب ہیں۔ “

Your Thoughts and Comments