Dr Biwi

ڈاکٹر بیوی

بدھ ستمبر

Dr Biwi

مجھ کو ہے دل کا عارضہ اور میری بیوی ڈاکٹر
پھر بھلا ہر مزے کی چیز مجھ سے نہ دور جائے کیوں
لنچ مراہے ابلی دال نا شتہ ایک ساد ہ ٹوسٹ
روسٹ کی خوشبو پھر بھلا ناک میں میری آئے کیوں
اصلی گھی سو نگھ سکتا ہوں مکھن کو دیکھ سکتا ہوں
کھانے کی آرزو مگر ناتواں دل میں آئے کیوں
حال میرانہ پوچھئے چال میری نہ دیکھئے
بس اتنا مجھ سے پوچھئے کرتا ہوں ہائے ہائے کیوں
جیتی رہے خدا کرے جس کو میرا خیال ہے
سوچ رہا ہوں یہ اشعار ذہن میں میرے آئے کیوں
اس کی ہر ایک بات میں چپکے سے مان لیتا ہوں
جس کو ہو جان ودل عزیز اس کے خلافت ہائے کیوں

Your Thoughts and Comments