Hakeem Je London Puhnch Gaye

حکیم جی لندن پہنچ گئے!

بدھ دسمبر

Hakeem Je London Puhnch Gaye
ابن انشاء:
ولایت والوں کو اپنے ملک کو ولایت بنانے میں جانے کتنی صدیاں لگیں،ہمارے پاکستانی اور ہندوستانی بھائی اسے چند ہی سال میں اپنے ڈھب پر لے آئے ہیں لندن اور برمنگھم کے اردو اخباروں پر نظر ڈالیے آپ کا جی نہال ہوجائے گا بہت کچھ جو انگریزی زبان میں چھپے تو شاید گرفت میں آجائے اُردو میں بہ خوبی چل رہاہے۔

ڈاکٹروں کے معاملے میں ایسی سختی ہے کہ فاطمہ جناح میڈیکل کالج کی فارغ التحصیل ڈاکٹرنیوں کو بھی فی الحال پریکٹس کرنے کا اذن نہیں لیکن ہمارے عطائی بھائیوں کی راہ انگریز نہیں روک سکا چنانچہ جہاں اور لوگ پہنچے وہاں زنانہ اور مردانہ پوشیدہ اور پیچیدہ بیماریوں کا محرب اور حکیمی علاج کرنے والے بھی پہنچ گئے کل یہاں کے ایک اُردواخبارمیں اشتہار دیکھا کہ چین ہیلتھ سینٹر آرام باغ کے ممتاز ماہر جنسیات نے جن کے پاس آر ایم پی کی پُر اسرار ڈگری ہے یہاں کے علاوہ لوگوں کے پرزور اصرارپر لندن میں بھی اپنا مستقل دواخانہ کھول دیا ہے جس میں خط وکتابت صفیعہ راز میں رکھی جاتی ہے حکیم صاحب نے اشتہار کے ساتھ اپنی تصویر بھی دی ہے ادھر نکڑ پرہندوستان کے حکیم ایس ایل بٹ ناگر صاحب بھی جو اٹھارہ میڈیکل کتابوں کے مصنف ہیں جس میں ہوم ڈاکٹر بھی شامل ہے لوگوں کے پرزوراصرار کی تاب نہ لاکر تشریف لے آئے ہیں ان کے اشتہار کے بہ موجب لاکھوں آدمی گزشتہ تین سال میں ان کے چشمہ فیض سے سیراب ہوچکے ہیں اتنی بڑی ولایت میں یہ دو حکیم کافی نہ تھے لہٰذا حکیم صاحب عبدالرحمن معالج خاص مردانہ کمزوری کو بھی مانچسٹر مطب کھولنا پڑا ہے یہ اپنے کو نیچر و پینتھ اور ہر بیلٹ لکھتے ہیں یعنی قدرتی طریقوں اور جڑی بوٹیوں سے علاج کرنے والے ان کا دعویٰ خداقت بے بنیاد نہیں ہے بلکہ اشتہار کہتا ہے تقریباً ایک سال کا عرصہ ہوا ایک صاحب اپنے ایک انیس سالہ بھتیجے اور اس کی سولہ سالہ دلہن کو لے کر مانچسٹر آئے اور حکیم صاحب سے بیان کیا کہ اس لڑکے کی شادی کو دو ہفتے ہوئے ہیں لیکن اس نے خودکشی کی کوشش بھی کی ہے اس کا کچھ علاج کیجیے حکیم صاحب نے تسلی دی اور دوائی بھی دی لڑکے نے تین ماہ دوائی استعمال کی چند ہفتے ہوئے وہ حکیم صاحب کے لیے ایک قمیض اور ٹائی اور دس پونڈ لڈو و بطور تحفہ لائے اور خوشخبری سنائی کہ جی بابے کی کرپا اور آپ کے علاج سے سب کچھ ٹھیک ہے میرے بھتیجے ے ہاں لڑکا پیدا ہوا ہے اورہم ڈھائی من لڈو تقسیم کیے ہیں لڈو کھاتے ایک اور ہندوستانی ماہر کی طرف آئیے یہ لندن میں ہیں ایشیا کے مشہورو معروف معالج ماہر جنسیات حکیم کے تردیدی ان کی ڈگریاں اور زیادہ لمبی چوڑی ہیں،”این۔

(جاری ہے)

ڈی۔او۔پی۔اے۔آر۔ایس۔ایچ۔“حیرت ہے کہ انہوں نے باقی حروف تہجی کیوں چھوڑدیے اے سے زیڈ تک استعمال کرنے میں کیا امرمانع تھا۔ یہ کھوئی ہوئی طاقت مردی کے علاوہ کھانسی زکام و نزلہ گھٹیا اور پیٹ کے درد کا بھی حکیمی علاج کرتے ہیں البتہ ملاقات کے لیے فون پر وقت مقرر کرنا پڑتا ہے یہ قول خود طاقت کی دوائیوں کے بادشاہ اور انٹرنیشنل شہرت کے مالک حکیم ہری کشن لال صاحب ماہر امراض پوشیدہ خود تو مصروفیات کے باعث تشریف نہیں لاسکے لیکن اپنا اشتہار لندن میں چھپوادیا ہے حکیم صاحب کو جھانسی یونیورسٹی نے کئی اعزازی ڈگریاں دے رکھی ہیں مثلا ً ایم ایس سی،اے اور ڈی ایس ای اے ان کا مطلب کیا ہے؟ڈگری کا مطلب نہیں پوچھا جاتا لمبائی دیکھی جاتی ولایت والوں کی آسانی کے لیے انہوں نے اپنے ریٹ پونڈوں میں دیے ہیں شاہانہ علاج 25 پونڈ عام علاج 18 پونڈ اور غریبانہ علاج12 پونڈ حکیم صاحب نے خدمت خلق کے جذبے سے یہ بھی اعلان کیا ہے کہ لاکھ روپے کی قیمتی کتاب پیغام جوانی مفت حاصل کریں اس میں لاکھ روپے کے پیغام جوانی کے علاوہ کئی لاکھ روپے کے حکیم صاحب کی دوائیوں کے اشتہار بھی ضرور ہوں گے سب مریضوں کے لیے مفت۔

پاکستان اورہندوستان بھائیوں کے لیے تازہ ترین خوشخبری یہ ہے کہ حکیم جے ایم کوشل بھی جو کھوئی قوتوں کو بحال کرنے میں بدطولیٰ رکھتے ہیں صرف پانچ روز کے لیے بریڈ فورڈ میں دور فرما ہوئے ہیں آپ کی ڈگریوں کا بھی شمار نہیں۔بی۔اے(پنجاب)اے۔بی۔ایچ۔ایس(بنارس یونیورسٹی) بنارس یونیورسٹی بی۔اے(پی۔یو)۔اے۔بی۔ایم۔ای(بی۔ایچ۔یو)ڈگری ڈاکٹری کی نہ بھی ہو تب بھی لیاقت کی دلیل تو ہے۔

حکیموں کے علاوہ سب سے زیادہ اشتہار ہمارے ان پاکستانی ہندوستانی بھائیوں کے ہیں جو وطن واپس آنے والوں کو ٹیلی ویژن،ریفریجریٹر ائیرکنڈیشنز،ٹیپ ریکارڈ رائٹرسلائی کی مشین وغیرہ فراہم کرتے ہیں۔ایک صاحب60 فیصد ڈسکاؤنٹ پر دوسرے 68 فیصدی پر اور تیسرے 70 فیصدیی ڈسکاؤنٹ پر ہم نے دیکھا نہیں لیکن سنا ہے بعض فرمیں سو دفیصدی ڈسکاؤنٹ پر بھی یہ سامان فراہم کرتی ہیں۔

آپ سوچتے ہوں گے کہ ان بزرگ نے جن کا ذکر ہم نے کہا ہے ڈھائی من لڈو کہاں سے لیے ہوں گے یادرہے کہ ایشیائی مٹھائیوں کا عظیم الشان مرکز سویٹ سینٹر جو جہلم والے مشہور و معروف پہلوان صاحب کی دکان ہے شادی بیاہ اور دوسری تقریبات کے لیے بہ کفایت خالص گھی کی مٹھائیاں فراہم کرتا ہے یہاں سے آپ گلاب جامن،رس ملائی،رس گلہ،جلیبی برفی لڈو،پیڑا ،بالوشاہی وغیرہ ہی نہیں دہی بھلے آلو چھولے سموسے نکمین دالیں اور سویاں وغیرہ بھی خریدسکتے ہیں۔

مٹھائی سے رغبت نہ ہو تو شہ روز محل ریسٹورنٹ میں تشریف لائے اور تندوری مرغ تندوری روٹی چکن اور مٹن تکے قورمہ کوفتہ وغیرہ کھائیے یہ چیزیں حلال گوشت سے تیار ہوتی ہیں جس سے آپ کا پیٹ بھر جائے اور خمار آنے لگے تو بھی مضائقہ نہیں رضائی سینٹر سے آپ کو ہر قسم کی آرام دہ رضائیاں مل سکتی ہیں شینل کی ڈبل رضائی 51/2 ساٹن ڈبل31/2 پونڈ چھنٹ ڈبل بھی ساڑھے تین پونڈ میں لیجیے اور پاؤں پسار کر سوئیے۔

آگر آپ کا سونے کو جی نہیں چاہتا تو سینما دیکھیے جتنی فلمیں یہاں لگی ہوئی ہیں پورے ہندوستان اورپاکستان میں نہ لگی ہوں گی پلسیم الیسولڈ دو (لنڈن) میں عندلیب(پاکستانی)ڈاکو کو منگل سنگھ ہے یملا جٹ ہے جس میں چاچا سنت رام جی کام کررہے ہیں یہ پیغام نصیحت ہم جولی تیسری منزل،دیوداس ان پڑھ وغیرہ کلاسک سینما میں ساون آیا جھوم کے پتھر کے صنم وغیرہ اور ڈین میں دیور بھابھی اور زرقا لکسر سینما مرمنگھم میں سجن بیلی تیرے عشق نچایا وغیرہ۔

الائٹ سینما میں (ڈو)سنچری میں میرے حضور اور جی چاہتا ہے مارلبرو بریڈ فورڈ میں سپنوں کا سوداگر کیمیو،کیمبر لندن میں آشیر واد بمبئی کا بابو ناز سینما لندن میں استادوں کے استاد کلاسک میں میرے محبوب ایک لمبی لسٹ کوئی کہاں تک گنوائے زندہ پروگرام چاہیے تو اس کا بھی انتطام ہے سردار آسامنگھ مستانہ بھی یہاں ہیں سریندر کور بھی اور پرکاش کور بھی آسامنگھ مستانہ جی پنجابی گیتوں کے شہنشاہیں وارث شاہ گاتے ہیں اور یہ دونوں یہاں ہیر کے علاوہ ٹپے گاتی ہیں اور پنجابی لوگ گیت سناتی ہیں کبھی کبھی قوالیاں بھی ہوتی ہیں آج کل کوئی قوال تو آئے ہوئے نہیں ہیں۔

البتہ ایک مشہور درگاہ کے گدی نشین صاحب کا اشتہار چھپاہے کہ عرس مبارک میں تشریف لائیں نہ لائیں تو گھر بیٹھے اپنی نیک کمائی کا پیسہ حسب توفیق نذرونیاز فاتحہ چادر،پھول شیرینی ختم وغیرہ کے لیے یہ طورونیاز بہ ذریعہ منی آرڈر برٹش پوسٹل آرڈر چیک وڈرافٹ کو کراس کرکے حقیر فقیر کے نام پتا درج ذیل روانہ کریں۔

Your Thoughts and Comments