پی ڈی ایم گیارہ پارٹیوں کا مربہ ہے جن کا نہ توکلچر ملتا ہے اور نہ ہی نظریہ ملتا ہے،میجر ریٹائرڈ طاہر صادق

بدھ جنوری 23:12

اٹک(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 20 جنوری2021ء) پاکستان تحریک انصاف کے ممبر قومی اسمبلی میجر(ر) طاہر صادق نے کہا کہ پی ڈی ایم گیارہ پارٹیوں کا مربہ ہے جن کا نہ توکلچر ملتا ہے اور نہ ہی نظریہ ملتا ہے یہ لوگ وزیر اعظم عمران خان کے خلاف اکٹھے ہوئے ہیں کیونکہ یہ سمجھتے ہیں کہ شاید لوگ مہنگائی کے ہاتھوںتنگ آکر حکومت کے خلاف اٹھ کھڑے ہوں گے میں حکومت سے بار بار کہہ رہا ہوں کہ اپنی رٹ بحال کریںحکومت کی رٹ نظر آنی چاہیے اور ایسے لوگوں کو کابینہ میں لیا جائے جو عوام کی بنیادی مسائل سے واقف ہوںلگڑ مشیروں سے ملک صیح سمت پر نہیں چل سکتا یہ بات انھوں نے کوٹ چھجی گائوں میں بڑے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہی انھوں نے کہا کہ ہم جعلی تختیاں نہیں لگائیں گے بلکہ اپنے مخالفوں کا تختہ کریں گے جہنوں نے عوامی مسائل کے حل کے لئے ہمار ے راستے میں رکاوٹ ڈالی ہے جتنے بھی سیاسی مخالفین جن میں نواز لیگ،پی پی اور پی ٹی آئی شامل ہے ا ن ساروں نے اکٹھے ہوکر تہیہ کیا ہے کہ میجر طاہر کو چلنے نہیں دینا ہے شاید وہ بھول گئے ہیں کہ جب عمران خان اٹک آئے تھے تو میں نے کہا تھا کہ مجھے مزا ہی تب آتا ہے جب گھرمس ہو میں جب مخالفت کو عبور کر کے آگے جاتا ہوں تو مجھے مزا آتا ہے انھوں نے کہا کہ پانچ چھ اور وزیروں کا اضافہ کر لیں میں چیلنج کرتا ہوں کہ یہ ایک دھلے کاکام نہیں کرسکتے ہم سے دو سٹیوں کا وعدہ کیا گیا تھا جب ہم دونوں سیٹیں جیت گئے تو ضمنی الیکشن میں ہمیں کہا گیا کہ ایک سیٹ لگڑ حلقہ 55کو دی جائے ہم نے کہا کہ کوئی ریوڑیاں ہیں جو انکو دے دیں ہم نے اٹک میں محنت کی ہے عوام کے مسائل حل کئے ہیں پھرانھوں نے نواز لیگ کے امیدوار کو پارٹی ٹکٹ دے دیا جو25جولائی تک ن لیگ کے لئے کام کر رہا تھا جس پر ہم خاموش ہو گئے کہ نئے پارٹی میں آئے ہیں سیٹ پر جھگڑا مناسب نہیںپھر انھیں کہا گیا کہ آپ نے میجر طاہر نے رابطہ نہیں کرنا اور بھائی جب قومی اور صوبائی حکومتیں اپنی ہوں تو پھر میجر طاہر کی ضرورت نہیں ہوتی عوام نے اس فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے نفرت کاووٹ ملک سہیل خان کو دے دیا جو بھاری اکثریت سے جیت گیا اور ایک ماہ کے اندر پی ٹی آئی کا گراف نیچے چلا گیا انھوں نے کہا کہ ہمارے دور حکومت میں کوئی افسر رشوت لینے کی جرت نہیں کر سکتا تھا نہ ہی ڈیمانڈ کرتا تھا ہم نے عوام کو انکی گھر کی دیلیز پر انصاف فراہم کیا اور مسائل حل کئے ہم اس وثیرن کے ساتھ نہیں ہیںکہ وزیر اعظم عمران خان کی واضح ہدایت کے باوجود بھی میرٹ کو نظر انداز کیا گیا اب میجر طاہر آپکو بتائے گا کہ میرٹ کیا ہوتا ہے اور جلد میجر تبدیلی آئے گی میرا ایمان ہے کہ آپ ان لگڑوں سے نہ گھبرائیںانھوں نے کہا کہ میں قیادت سے کہتا ہوں کہ جہہوریت کی بات کرتے ہیں تو پارٹی کے اندر الیکشن کرائیں جو جیت گیا اسکو تسلیم کریں حلقہ این ای55کے لگڑ نے اپنے ذاتی ملازم کو پارٹی عہدہ دے رکھا ہے حلقہ این ای56میرا گھر ہے جنڈ کے لوگ پیار کرنے والے ہیں ان میں لالچ نام کی کوئی چیز موجود نہیں ہے آپکی بھلائی کا جو بھی کام ہوگا وہ انشااللہ میرے ہاتھوں سے ہوگا اور ایسا کام ہو گا جس میں آپکی نسلوں کی بھلائی ہے انھوں نے کہا کہ میرے وزیر اعلیٰ بننے کی مخالفت بھی اس لئے کی گئی کہ انھیں خطرہ تھا کہ میجر طاہر سیاسی طور پر ہمیں کھا جائے گا مجھے اپنی ذات اور اہلیت پر بھروسہ اور اعتماد ہے میں سمجھتا ہوں کہ بلدیاتی نظام لولا لنگڑا نظام ہے ضلع اور یونین کونسل کو ختم کر دیا میں پوچھتا ہوں کہ بھائی کیا کرنا چاہتے ہو ضلع میں ڈی سی کوبٹھانا ہے تو نظام کیسے چلائیں گے آپ کیوں خائف ہیں وزیر اعظم عمران خان کو ایسا نظام لوگوں کو دینا چاہیے کہ نیچے سے عام اٹھ کر ایم این اے اور ایم پی اے بنے ضلع کونسل اور یونین کونسل کو بحال کریںانھوں نے کہا کہ اس کرکٹ گروانڈ کو ایم پی اے جہانگیر خانزادہ نے شروع کرایا ہے لیکن انکی حکومت ختم ہو گئی ملک جمشید اطاف ایم پی اے نے دو اڑھائی کروڑ روپے کے فنڈ لائے ہیں ساتھ ہم بھی اس کرکٹ سٹیڈیم کیلئے تعاون کریں گے انھوں نے کہا کہ ن لیگ نے ملک کو بے دردی سے لوٹا وہ سونے کے نوالے بھی کھاتے تو کئی نسلوں تک وہ ختم نہیں کرسکتے تھے آج ملک اور عوام اس خمیازہ بھگت رہے ہیںمیں حکومت سے کہتا ہوں کہ وہ اس گند کو سمٹیں لیکن اپنی کارکرگی بھی دیکھائیں مہنگائی کو کنڑول کریں اور عوام کو ریلیف فراہم کریں ن لیگ کی قیادت نے افواج پاکستان کے خلاف حملہ کیا اٹک غیور لوگوں کا خطہ ہے یہ اپنی فوج کے ساتھ کھڑے ہیںفوج نے ملک کی خاطر قربانیاں دی ہیںنواز شریف کو بھی جنرل جیلانی لیکر آئے تھے وہ یہ بات کیوں بھول جاتے ہیںآپ کیوں بھول جاتے ہیں کہ قوم فوج کے خلاف ایک لفظ برداشت نہیں کرئے گی فوج نے ملک کو تحفظ فراہم کیا اگر فوج کو نقصان ہوا تو یہ پاکستان کا برا نقصان ہو گا اور ہندوستان کی خواہش ہے کہ پاکستان کی فوج خراب ہوعوام اسے پسند نہ کریں انھوںنے کہا کہ یہ وہ نواز شریف ہے جو مودی کو بغیر ویزا کے افغانستان سے پاکستان لے آیا تھا اور اس ملاقات میںکوئی سرکاری افسر موجود نہیں تھا اور اب پھر باہر بیٹھ کر بھارت کے ساتھ ملکر ملک کے خلاف سازشیں کر رہے ہو جب تک افواج پاکستان ہے پاکستان پر کوئی آنچ نہیں آسکتی انھوں نے کہا کہ ایسے پارٹیاں نہیں چلتی ہیں انصاف کے تقاضوں پر پارٹی چلتی ہے اور ہمارا نام ہی تحریک انصاف ہے کہ ہم انصاف کی تحریک ہیں میں واضح کر دوں کہ پارٹی کے اندر انصاف پر بات کریں گے قبل ازیں میجر طاہر صادق کو بڑے جلوس کی صورت میں پنڈال لایا گیا اور ڈھول کی دھن پر لڈی پیش کی گئی

اٹک شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments