حضرو توہین رسالت کیس‘ ایڈیشنل سیشن جج اٹک نے جرم ثابت ہونے پر ملعون اسلام عرف طوطی کو سزائے موت سنا دی

ملعون اسلام عرف طوطی 6اپریل2019کو توہین رسالت کا مرتکب ہوا تھا جس پر ذوالفقار احمدکی مدعیت میں گواہان کے ہمراہ تھانہ حضرو میں مقدمہ نمبر 97/19زیر دفعہ 295Cدرج ہوا تھا شہادتیں،گواہان اور تمام عوامل عدالت کے سامنے رکھے گئے ، عدالت میں مختلف احادیث، کتب اور حوالہ جات کی روشنی میں توہین رسالت کے ملزم کو سزائے موت دینے کی اپیل کی گئی ۔ ایڈووکیٹ سپریم کورٹ شیخ احسن الدین کی مدعی مقدمہ ذولفقار احمد، ملک رفیق آرائیں اور نثار علی خان کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو

منگل 14 ستمبر 2021 00:24

حضرو (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 13 ستمبر2021ء) اٹک کی سیشن کورٹ نے توہین رسالت کے مجرم اسلام عرف طوطی کو جرم ثابت ہونے پر سزائے موت سنا دی، ایڈیشنل سیشن جج اٹک جاوید اقبال بوسال نے شواہد ، گواہان اور دیگر عوامل کی روشنی میں فیصلہ دیا، ایڈووکیٹ سپریم کورٹ معروف قانون دان شیخ احسن الدین نے مقدمہ کی پیروی کرنے والے انجمن تاجران مینا بازار حضرو کے صدر ملک رفیق آرائیں، مدعی ذوالفقار اور معروف صحافی نثار علی خان کے ہمراہ میڈیا کو اس حوالہ سے بتایا کہ 6اپریل 2019کو حضرو شہر میں ملازمت پر درزی کا کام کرنے والے اسلام عرف طوطی ولد فقیر محمد قوم شاہ خیل ساکن محلہ حسن آباد حضرو نے باتوں باتوں میں نبی کریم ﷺ کی شان میں توہین آمیز کلمات کہہ دیئے جس پر ذوالفقار احمد ولد محمد مسکین کی مدعیت میں گواہان محمد زبیر، راشد محمود، جہانزیب، عثمان علی، کے ہمراہ تھانہ حضرو میں مقدمہ نمبر 97/19زیر دفعہ 295Cدرج ہوا اس حوالہ سے تمام مکاتب فکر کے علماء کرام، مختلف کاروباری یونینز ، دکانداروں اور عاشقان رسول ﷺ نے احتجاجی مظاہرہ کیا جس پر مجرم کو گرفتار کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا اور جب ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ میں سماعت شروع ہوئی تو شہادتیں ، گواہان اور تمام عوامل عدالت کے سامنے رکھے گئے یوں ایڈیشنل سیشن جج جاوید اقبال بوسال نے انصاف کے تقاضے پورے کرتے ہوئے مجرم اسلام عرف طوطی کو سزائے موت سنا دی ، اس موقع پر مجرم کے بھائی اور اس کے وکیل سرمد علی بھی موجود تھے ۔

(جاری ہے)

یاد رہے اس کیس کی پیروی کیلئے ممتاز قانون دان شیخ احسن الدین ایڈووکیٹ نے اپنی رضاکارانہ خدمات خود سینئر صحافی نثار علی خان کو پیشکش کی تھیں جو علالت کے باوجود بھی عدالت میں بحث کرتے رہے جنہوں نے مختلف احادیث، کتب اور حوالہ جات کی روشنی میں توہین رسالت کے ملزم کو سزائے موت دینے کی اپیل کی، ان کی معاونت شیخ ذوالفقار احسن ایڈووکیٹ اور شیخ ثوبان علی ایڈووکیٹ نے بھی رضاکارانہ طور پر کی جبکہ انجمن تاجران مینا بازار حضرو کے صدر ملک رفیق آرائیں اور معروف صحافی نثار علی خان خاصے متحرک رہے ، اس موقع پر ملک رفیق آرائیں اور نثار علی خان نے مدعی مقدمہ ذوالفقار ذلفی اور گواہان کے جذبہ ایمانی اور عشق رسول ﷺ کو سراہا ، انہوں نے رضاکارانہ خدمات پر شیخ احسن الدین ایڈووکیٹ،شیخ ذوالفقار احسن ایڈووکیٹ اور شیخ ثوبان احسن ایڈووکیٹ کو زبردست الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا

اٹک شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments