بنوں،بے نامی جائیدادوں کی نشاندہی کے لئے فوری اقدامات کی ضرورت ہے،ڈپٹی کمشنر عطاء الرحمن

بدھ ستمبر 23:49

بنوں(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 18 ستمبر2019ء) ڈپٹی کمشنر عطاء الرحمن نے ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ بے نامی جائیدادوں کی نشاندہی کے لئے فوری اقدامات کی ضرورت ہے اور اس ضمن میں متعلقہ محکموں کے افسران متحرک کردار ادا کریں اور سرٹیفکیٹ بھجوائیں، نشاندہی نہ کی جانے والی بے نامی جائیداد کا بعد میں پتہ چلنے پر متعلقہ افسر کے خلاف بے نامی قانون کے تحت کاروائی عمل میں لائی جائے گی، ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر بنوں عطاء الرحمن نے بے نامی اور مشکوک جائیدادوں کی معلومات کے حوالے سے منعقدہ میٹنگ میں ریونیو افسران کو ہدایات دیتے ہوئے کیا، میٹنگ میں اسسٹنٹ کمشنر بنوں شوذب عباس ،تمام ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرز ،ریونیو آفسران اور ٹی ایم اوز موجود تھے ڈپٹی کمشنر بنوں عطا ء الرحمن نے مزید کہا کہ وزیراعظم پاکستان آفس کی جانب سے جاری کردہ لیٹر میں بے نامی جائیدادوں سے متعلق کریک ڈاؤن کا فیصلہ کرتے ہوئے ملک بھر کے ڈپٹی کمشنرز اور ڈویلپمنٹ اتھارٹیز کے سربراہان کو اہم ذمہ داری سونپ دی ہے کہ وہ ایک ماہ کے اندر اپنے متعلقہ علاقوں میں واقع بے نامی اور مشکوک جائیدادوں کی نشاندہی کرکے رپورٹ پیش کریں، انکا مزید کہنا تھا کہ اس سلسلے میں بے نامی‘ قانون بھی متعارف کرایا تھا جس کا اطلاق ایسی جائیدادوں پر ہوگا جو ڈرائیور، مالی یا نوکر وغیرہ کے نام پر ہوں گا اور جس نے بھی بے نامی جائیداد رکھی ہوگی وہ اس قانون کے زمرے میں آئے گا اور اسکی جائیداد ضبط کرکے اسکے خلاف کاروائی کی جائے گی، لہٰذا آپ تمام آفیسرز ایسی تمام پراپرٹیز کے بارے میں معلومات لیں جو فرضی ناموں سے ضلع بھر میں موجود ہیں، ہمارا فرض ہے کہ ہم اپنا کام پوری ایمانداری سے کریں اور ایسے عناصر کو سامنے لائیں، آخر میں انہوں نے کہا کہ عدم دلچسپی دکھانے والے آفیسر کے خلاف سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی

بنوں شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments