ڈینگی کا خاتمہ ہمارا مشن ہے، ڈپٹی کمشنر چنیوٹ

مچھروں کی بریڈنگ سائٹس کو ختم کرنا اور صفائی کا خاص خیال رکھنا ،مچھروں سے بچائو کیلئے حفاظتی تدابیر اختیار کرنا بھی ضروری ہے ، تمام محکموں کے افسروں کی اینڈرائیڈ ایپ کے زریعے ٹریننگ کا مقصد بھی یہی ہے کہ ان مچھروں کی افزائش کے پوائنٹس کو تلف کیا جائے، سید امان انور قدوائی کا ڈی ایچ کیو ہسپتال میں انسداد ڈینگی آگاہی ورکشاپ سے خطاب

ہفتہ ستمبر 21:34

چنیوٹ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 21 ستمبر2019ء) ڈینگی کا خاتمہ ہمارا مشن ہے اس کے لیے مچھروں کی بریڈنگ سائٹس کو ختم کرنا اور صفائی کا خاص خیال رکھنا ،مچھروں سے بچائو کیلئے حفاظتی تدابیر اختیار کرنا بھی ضروری ہے ، تمام محکموں کے افسروں کی اینڈرائیڈ ایپ کے زریعے ٹریننگ کا مقصد بھی یہی ہے کہ ان مچھروں کی افزائش کے پوائنٹس کو تلف کیا جائے تاکہ معاشرے کو اسکے مہلک اور خطرناک اثرات سے محفوظ رکھا جا سکے گا، ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر سید امان انور قدوائی نے ڈی ایچ کیو ہسپتال میں انسداد ڈینگی کی آگاہی ورکشاپ و سیمینارمیں شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا جس میں تمام محکموں کے افسران ، اسسٹنٹ کمشنرخضر حیات بھٹی ، عدنان رشید ،فضل عباس ، سی او ہیلتھڈاکٹر مشتاق بشیر عاکف ، ڈی ایچ اوڈاکٹر مہار اختر بلوچ ،ڈپٹی ڈائریکٹرسوشل ویلفیئر مس فرخ رضوان، ظفر عباس ، ڈاکٹر قمر سلطانہ بھٹی ، ڈاکٹر امیر علی، ایس این اے مہر عمر حیات سپراء ، ریسکیو1122 آفیسر قیصر عباس ، سول دیفنس آفیسر محمد صدیق ، لیبر آفیسر امتیاز احمد، سی اوز میونسپل کمیٹیز و ضلع کونسل و دیگرڈیپارٹمنٹس کے نمائندگان نے شرکت کی ، ڈپٹی کمشنر نے سی ڈی سی سپراوئزرو دیگر انسداد ڈینگی ٹیموں کے انچارجز کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ لوگ ٹریننگ کے باوجود کارکردگی کا مظاہرہ نہیں کر رہے مزید محنت کریں ،ڈینگی سے ڈرنے کی نہیں بلکہ لڑنے کی ضرورت ہے ، سی او ہیلتھ ڈاکٹر مشتاق بشیر عاکف اور ڈی ایچ او ڈاکٹر مہار اختر بلوچ نے شرکاء میٹنگ کو اینڈ رائیڈ ایپ سے ڈینگی کے ہاٹ سپاٹس اور انکے خاتمے کی تصاویر کی اپ لوڈنگ اور دیگر تکنیکی معلومات سے متعلق آگاہی فراہم کی اور ڈینگی مچھر ، لاروے کی نشاندہی کے طریقہ کار اور اسکے خاتمے کے بارے میں تفصیلی طور پر بتایا جبکہ روزانہ کی بنیاد پر اینڈ رائیڈ ایپلیکیشن کے ذریعے رپورٹرنگ سے متعلق بھی آگاہی فراہم کی ۔

متعلقہ عنوان :

چنیوٹ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments