فیصل آباد ، 12 سالہ بچی کو اغواء کرکے 45 سالہ شخص نے شادی کرلی

پولیس نے بچی بازیاب کروالی ، ملزم جائے وقوعہ سے فرار ، 6 ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرلیا گیا

Sajid Ali ساجد علی ہفتہ دسمبر 17:07

فیصل آباد ، 12 سالہ بچی کو اغواء کرکے 45 سالہ شخص نے شادی کرلی
فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 دسمبر2020ء) صوبہ پنجاب کے شہر فیصل آباد میں بااثر ملزمان نے 12 سالہ بچی کو اغواء کر کے اس کی شادی 45سالہ شخص سے کرادی۔ تفصیلات کے مطابق یہ واقعہ فیصل آباد کے علاقے احمدآباد میں پیش آیا جہاں سے پہلے 12سالہ بچی کو اغواء کیا گیا جس کے بعد اس کی شادی ایک 45 سالہ شخص سے زبردستی شادی کروادی گئی ، پولیس کو اطلاع ملی تو اس نے جائے وقوعہ پر فوری چھاپہ مارا جس کے نتیجے میں پولیس نے اغواء کی گئی بچی تو بازیاب کروا لیا تاہم دولہا سمیت باقی تمام ملزمان جائے وقوعہ سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے جس کی وجہ سے کوئی گرفتاری بھی عمل میں نہیں لائی جاسکی ، پولیس کی طرف سے 6 ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

ادھر برمنگھم میں لڑکی کی زبردستی شادی کروانے کی کوشش پر پاکستانی جوڑے کو لمبی سزا سنا دی گئی ، جوڑے نے عدالت میں اعتراف کیا ہے کہ انہوں نے 18 سالہ لڑکی کی زبردستی شادی کروانے کی کوشش کی تھی جب کہ یہ بھی بتایا گیا ہے کہ لڑکی کو تشدد کا نشانہ بھی بنایا جاتا رہا ، عدالت کی جانب سے فیصلہ سناتے ہوئے 55سالہ پاکستانی نژاد کو 7 سال جبکہ اس کی 43 سالہ بیوی کو ایک سال قید کی سزا سنائی گئی ہے ، میاں بیوی اور لڑکی کا نام قانونی وجوہات کی بنا پر نہیں بتائے گئے۔

(جاری ہے)

لڑکی کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ پاکستانی جوڑہ لڑکی کے رشتہ دار ہیں جو کہ برطانیہ میں اس کی دیکھ بھال کرتے تھے جبکہ لڑکی کی ماں کو ویزہ کے مسائل ہونے کی وجہ سے واپس پاکستان بھیج دیا گیا تھا ، برطانوی میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ لڑکی کو 10 سال کی عمر میں پاکستان بھیجا گیا تھاجہاں اس پر جسمانی تشدد بھی کیا جاتا تھا اور اسے کھانا بھی نہیں دیا جاتا تھا، لڑکی 4 سال بعد برطانیہ لوٹی تھی اور وہاں اپنی ایک اور آنٹی کے ساتھ رہ کر اس نے اپنی تعلیم حاصل کی او ر ملازمت بھی حاصل کی۔

فیصل آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments