ڈویژن بھرمیں ڈینگی سے بچائو کے لئے اقدامات تیز کردیئے گئے، ڈویژنل کمشنر محمود جاوید بھٹی

ہفتہ ستمبر 22:06

فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 21 ستمبر2019ء) ::فیصل آباد ڈویژن میں ڈینگی سے بچائو کے لئے کامیاب اقدامات کئے گئے ہیں جن کی بدولت انسدادی واحتیاطی صورت حال تسلی بخش ہے تاہم دیگر اضلاع سے آنیوالے ڈینگی کے مریضوں کے علاج معالجہ کے لئے بھی میڈیکل سروسز کو منظم و متحرک رکھا گیا ہے ۔یہ بات ڈویژنل کمشنر محمود جاوید بھٹی نے الائیڈ ہسپتال میںڈینگی کے مریضوںکے لئے مختص آئسولیشن وارڈ کا دورہ کرتے ہوئے کہی۔

ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز ڈاکٹر طارق اسلام،پروفیسر آف میڈیسن ڈاکٹر عامر حسین،ایڈیشنل میڈیکل سپرنٹنڈنٹس ڈاکٹراکرم چیمہ،ڈاکٹر فہیم یوسف و دیگر ڈاکٹر بھی اس موقع پر موجود تھے ۔ڈویژنل کمشنر نے ڈینگی کے مریضوں کے علاج معالجہ کی صورت حال کا جائزہ لیا اور اپنے اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مقامی اور دیگر اضلاع سے علاج کے لئے رجوع کرنے والے ڈینگی کے مریضوں کی صحت کی جلد بحالی کے لئے طبی سہولیات کی فراہمی میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھی جائے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ ڈینگی لاروا کی افزائش روکنے کے لئے سرویلنس اور انسدادی اقدامات کے ساتھ ساتھ ڈینگی مچھر سے بچائو کے لئے شہریوں میں زیادہ سے زیادہ آگاہی پیدا کریں جس کا سلسلہ دیہی اوردوردراز کے علاقوں تک وسیع کیا جائے۔ڈویژنل کمشنر نے کہا کہ ڈویژن بھر میں انسداد ڈینگی مہم پر کامیابی سے عملدرآمد کیلئے تمام تر وسائل اور انتظامی مشینری کو متحرک رکھا ہے اور ڈینگی کے مسئلے پر قابو پانا اولین ترجیح ہے اس ضمن میں وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی طرف سے تمام اضلاع کی انتظامیہ،محکمہ صحت اور دیگر متعلقہ محکموں کو سخت ترین ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ڈینگی کے کسی بھی مریض کے رپورٹ ہونے کی صورت میں اسکی رہائش کے قریبی تمام علاقے کی کیمیکل ٹریٹمنٹ کی جاتی ہے اور انشاء اللہ ڈینگی کو سر اٹھانے کا موقع نہیں دیا جائے گا جبکہ موسمی درجہ حرارت میں کمی سے بھی ڈینگی کا مسئلہ قابو میں رہے گا۔انہوں نے شہریوں سے کہا کہ وہ احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہوئے گھروں میں مچھروں کا داخلہ بند کرنے کے انتظامات کریں اور رات کو سوتے وقت مچھر دانی لگانے کے علاوہ مچھر بھگائو لوشن اور کوائل کا استعمال کریں جبکہ صفائی ستھرائی کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ پوری آستین والی قمیضیں پہنیں۔

فیصل آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments