فیصل آباد،محکمہ تحفظ ماحولیات نے انسداد سموگ اقدامات پر کارروائیاں جاری

ضلع بھر کے 182بھٹہ خشت کو سیل اور دھواں چھوڑنے والے 53 صنعتی یونٹس کے خلاف مقدمات درج کروا دیئے گئے

بدھ نومبر 16:14

فیصل آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 نومبر2020ء) محکمہ تحفظ ماحولیات نے انسداد سموگ اقدامات پر بھرپور کارروائیاں جاری‘فضائی آلودگی کا موجب بننے والے ضلع بھر کے 182بھٹہ خشت کو سیل اور دھواں چھوڑنے والے 53 صنعتی یونٹس کے خلاف مقدمات درج کروا دیئے۔ڈپٹی ڈائریکٹر محکمہ تحفظ ماحولیات فرحت عباس کموکا نے بتایا کہ حکومت پنجاب کی طرف سموگ پھیلنے کے اندیشہ کے پیش نظر 31دسمبر تک زگ زیگ ٹیکنالوجی کے بغیر چلنے والے بھٹوں کو بند رکھنے کے احکامات جاری کر رکھے ہیں جبکہ دھواں چھوڑنے والی ٹیکسٹائل ملوں‘ڈائینگ فیکٹریوں‘سائزنگ انڈسٹری سمیت دیگر یونٹس کیخلاف بھرپور ایکشن لیا جا رہا ہے اور حکومت پنجاب کے احکامات اور ڈپٹی کمشنر محمد علی کی ہدایت پر محکمہ تحفظ ماحولیات سموگ کیخلاف بھرپور ایکشن لیاگیا ہے ضلع بھر میں 405بھٹہ خشت موجود ہیں جن میں سے 54بھٹہ زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقل ہوچکے ہیں اور مزید 8بھٹہ خشت کو زگ زیگ ٹیکنالوجی پر منتقل کیا جارہا ہے جبکہ پرانی ٹیکنالوجی پر چلنے والے بھٹوں کیخلاف انسداد سموگ مہم کے دوران 182بھٹوں کو سیل اور 38کیخلاف مقدمات درج کروائے گئے جس پر اب تقریباً دیگر بھٹوں پر کام بند ہوچکا ہے اور روزانہ کی بنیاد پر چیکنگ کا سلسلہ بھی جاری ہے جہاں بھی سموگ کی وائیلشن پائی گئی ان کیخلاف بھرپور انسداد کارروائی کی جائیگی۔

(جاری ہے)

اس کے ساتھ ساتھ شہر بھر میں دھواں چھوڑنے والی ملوں کے خلاف بھی ایکشن لیاگیا اور 53صنعتی یونٹس جن میں رحیم ٹیکسٹائل ‘فضل ڈائینگ‘گل ڈائینگ‘مکہ ڈائینگ‘منیر ڈائینگ ‘ماسٹر پروسیسنگ مل‘لطیف ہوزری ‘فنشنگ پلانٹ‘پشاور کیمیکل ‘نیشنل سائزنگ‘بلال پلاسٹک دانہ فیکٹری‘صابر آٹو ‘ نمک فیکٹری وغیرہ کیخلاف سموگ اقدامات کی خلاف ورزی پر مقدمات درج کروائے گئے ہیں انہوں نے کہا کہ حکومتی ہدایات پر 31دسمبر تک انسداد سموگ کے تحت بھرپور مہم جاری رہے گی اور اسکے ساتھ ساتھ ٹریفک پولیس کیساتھ مل کر دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کیخلاف بھی روزانہ کی بنیاد پر کارروائیوں کا سلسلہ جاری ہے فرحت عباس کموکا نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ اگر وہ کسی بھی جگہ فیکٹریوں ‘بھٹوں کو دھواں چھوڑتے دیکھیں تو فوری اطلاع کریں تاکہ ان کے خلاف کارروائی کی جا سکے۔

فیصل آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments