صادق آباد، ماہی چوک پر ڈاکوئوں نے دن دہاڑے پیٹرول پمپوں پر حملہ کرکے ایک ہی خاندان کے 9 افراد کو قتل کردیا

مقتولین پر انڈھڑ گینگ کی مخبری کا الزام تھا جس کا ڈاکوئوں نے بدلہ لیا ہے مقتولین کے ورثہ کے حملہ آوروں کی گرفتاری کے لئے گڈو کشمور روڈ بند کر رکھا ہے، ذرائع

اتوار 10 اکتوبر 2021 21:00

صادق آباد، ماہی چوک پر ڈاکوئوں نے دن دہاڑے پیٹرول پمپوں پر حملہ کرکے ایک ہی خاندان کے 9 افراد کو قتل کردیا
صادق آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 10 اکتوبر2021ء) سندھ پنجاب کے سرحدی علاقے ماہی چوک میں بدنام زمانہ ڈاکوئوں کے گینگ نے دن دیہاڑے دو پیٹرول پمپوں پر حملہ کرکے ایک ہی خاندان کے 8افراد سمیت 9 افراد کو اندھا دھندھ فائرنگ کر کے قتل کر کے فرار ہوگئے ۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز سندھ پنجاب کے سرحدی علاقے پنجاب صادق آباد کے نواحی شہر چوک ماہی میں بدنام زمانہ جرائم پیشہ انڈھڑ گینگ کے تین موٹر سائیکلوں پر سوار مسلح افراد نے دو پیٹرول پمپوں پر دن دیہاڑے حملہ کردیا اور فائرنگ کر کے ایک ہی خاندان کے منور انڈھڑ غلام نبی فاروق شریف نذیر سمیت 8 افراد سمیت 9 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا جبکہ ایک شخص شدید زخمی ہوگیا ہے لاشوں اور زخمی کو صادق آباد اور رحیم یار خان کے اسپتالوں میں لیجایا گیا ہے ڈی پی او رحیم یار خان اسد سرفراز کے مطابق مقتولین کی جرائم پیشہ عناصر کے ساتھ پرانی دشمنی تھی جس کی وجہ سے یہ واقع ہوا ہے پولیس ڈاکوں کے تعاقب میں روانہ ہو گئی ہے تین سال قبل پولیس نے انڈھڑ گینگ کے چھ افراد کو ہلاک کیا تھا ڈاکوئوں نے بدلے میں پولیس اہلکار کوبھی شہید کیا تھا جبکہ مقتولین پر انڈھڑ گینگ کی مخبری کا الزام تھا جس کا ڈاکوئوں نے بدلہ لیا ہے مقتولین کے ورثہ کے حملہ آوروں کی گرفتاری کے لئے گڈو کشمور روڈ بند کر رکھا ہے آخری اطلاعات تک پولیس نے کسی بھی ڈاکو کو گرفتار نہیں کیا جا سکا ہے پولیس ڈاکووں کے تعاقب میں روانہ ہے کسی بھی وقت ڈاکوں اور پولیس کے درمیان مقابلہ ہو سکتا ہے اس واقواقع کے بعد علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا ہے

گھوٹکی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments