مستقبل میں گلگت بلتستان سبزیوں کی پیداوار میں خود کفیل ہو جائے گا،ایفاد

بدھ ستمبر 11:55

گلگت ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 18 ستمبر2019ء) بنجر زمینوں کو آباد ہوتا دیکھ کر خوشی ہو رہی ہے، مستقبل میں گلگت بلتستان سبزیوں کی پیداوار کے حوالے سے خود کفیل ہو جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار ایفاد کے ایسوسی ایٹ وائس پریذیڈینٹ ڈونلڈ براون نے شیر قلعہ گلگت بلتستان میں فٹی داس ایریگیشن اینڈ لینڈ ڈویلپمنٹ پراجیکٹ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ای ٹی آئی پروگرام جدید خطوط پر مقامی لوگوں کا معیار زندگی بہتر بنا رہا ہے۔ ای ٹی آئی کی ٹیم اس حوالے سے مبارک باد کے مستحق ہے جنہوں نے عوامی اشتراک سے منصوبوں کو بہتر انداز میں پایہ تکمیل تک پہنچایا ہے۔ انہون نے کہاکہ تین سال بعد جب میں دوبارہ آونگا تو یہ بنجر زمینیں سر سبز و آباد ہونگی اور لوگ ان زمینوں سے مستفید ہو رہے ہونگے۔

(جاری ہے)

اس موقع پر اپنے خطاب میں چیف سیکریٹری گلگت بلتستان خرم آغا نے کہا کہ ای ٹی آئی پراجیکٹ عوام کے اشتراک کے بغیر ناممکن ہے ، گلگت بلتستان کی عوام نے اس پروگرام میں بھر پور حصہ ڈال کر اسے کامیاب بنایا ہے۔ مستقبل میں اس پروگرام کے ذریعے ہزاروں خاندان مستفید ہونگے۔ قبل ازیں انٹرنیشنل فنڈ فار ایگریکلچر ڈیولپمنٹ کے تین رکنی مشن نے ای ٹی آئی کے تعاون سے چلنے والے ممو ڈیری پروسیسنگ یونٹ دنیور اور ورٹیکل فارمنگ پروگرام اوشکھنداس کا بھی دورہ کیا۔

اس موقع پر کسانوں اور کمیونٹی سے ملاقاتیں بھی کیں۔منصوبوں کے دورے کے دوران ای ٹی آئی کے ذمہ داران نے ایفاد مشن کو بریفنگ بھی دی۔ ایفاد مشن دو روزہ دورے کے دوران ای ٹی آئی کے مختلف پراجیکٹس کا افتتاح بھی کر رہا ہے۔ مشن میں ایفاد کے ایشیاء و پیسیفک کے ڈائریکٹر نیگل بریڈ اور کنٹری ڈائریکٹر ہوبرٹ بوئرارڈ بھی ہمراہ ہیں۔ انٹرنیشنل فنڈ فار ایگریکلچر ڈویلپمنٹ کے تعاون سے گلگت بلتستان میں زراعت اور عوامی معاشی ترقی کے مختلف منصوبے جاری ہیں۔

گلگت شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments