اسلام آباد میں بیٹھی حکومت چند مہینوں کی مہمان ہے، بلاول بھٹو

عوام پی ڈی ایم کا ساتھ دیں، پورے پاکستان میں جمہوریت بحال کریں گے

پیر اکتوبر 21:55

اسلام آباد میں بیٹھی حکومت چند مہینوں کی مہمان ہے، بلاول بھٹو
گلگت (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 26 اکتوبر2020ء) چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے دعویٰ کیا ہے کہ اسلامآباد میں بیٹھی ہوئی حکومت چند مہینوں کی مہمان ہے،ہمیں گلگت بلتستان کو تحریک انصاف کی حکومت کی تبدیلی سے نہیں بلکہ تباہی سے بچانا ہے،آپ پی ڈی ایم کا ساتھ دیں، پورے پاکستان میں جمہوریت بحال کریں گے۔ ان خیالات کا اظہا رانہوں نے گلگت بلتستان کے ضلع کھرمنگ میں جلسے سے خطاب کے دوران کیا ۔

بلاول نے عوام سے کہا کہ آپ لوگوں نے تیر کے نشان پر مہر لگانا ہے کیونکہ یہ اقتدار کی لڑائی نہیں ہے بلکہ آپ کے مستقبل کا سوال ہے۔بلاول بھٹو نے کہا کہ جگہ جگہ استقبال کیا گیا، زندگی بھرآپ کی محبت نہیں بھول سکتا۔ انہوں ںے کہا کہ آج ہم ایٹمی طاقت ہیں تو اس کااعلان بھٹو نیانہی پہاڑوں پرکیا تھا۔

(جاری ہے)

انہوں ںے کہا کہ جمہوری جدوجہد میں کھرمنگ کے نوجوانوں کا خون شامل ہے۔

چیئرمین پی پی نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی انسانی حقوق کی جدوجہد پریقین رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کو شناخت پیپلزپارٹی نے دلائی تھی۔ انہوں ںے کہا کہ گلگت بلتستان کے لوگوں کو تمام حقوق دلوائیں بھی دلوائیں گے۔ انہوں ںے کہا کہ گلگت بلتستان کے ساتھ جووعدہ کیا وہ ہم سب نے پورا کرنا ہے۔ انہوں نے کہا پی پی نے ایف سی آر کا خاتمہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ آج ملک میں آٹے کا بحران ہے اور عمران خان اسٹیل ملز کو بند کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ حکمران از خود تو فیصلے کرلیتے ہیں لیکن آپ کی بات نہیں سنتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب کا مطالبہ ہے کہ ہمیں جمہوری حقوق دیں۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ہم نے آپ کو جمہوری حقوق دلوانا ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے آپ کو پی ٹی آئی کی تباہی سے بچانا ہے۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ عمران خان روزگار کے ادارے بند کرانا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کی پالیسی کی وجہ سے نوجوان بیروزگار ہیں۔بلاول نے کہا کہ پی پی حکومت نے تنخواہوں میں100 فیصد اور پنشن میں 150 فیصد اضافہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ اب بھی صرف سندھ حکومت نے سرکاری ملازمین کی تنخوامیں اضافہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ لیڈی ہیلتھ ورکرزکا منصوبہ بینظیربھٹو کا کارنامہ ہے۔

انہوں ںے کہا کہ بینظیربھٹونے خواتین کو بھی روزگارکے مواقع فراہم کیے۔حکومت پر سخت تنقید کرتے ہوئے چیئرمین پی پی نے کہا کہ موجودہ حکمرانوں نے جو وعدہ کیا وہ جھوٹا نکلا اور ہر وعدے پر یو ٹرن لیا۔ انہوں ںے کہا کہ اگر موقع ملا تو آپ کے تمام مسائل حل کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ خواہش مند ہوں کہ غریب کا بچہ بھی پڑھے۔ بلاول بھٹو نے اعلان کیا کہ ہرڈسٹرکٹ میں یونیورسٹی کیمپس بنائیں گے، معذور افراد کے لیے کوٹے پرنوکریاں دیں گے اور مزدوروں کے لیے مزدور کارڈ پروگرام شروع ریں گے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہمیں گلگت بلتستان کو پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت کی تبدیلی سے نہیں بلکہ تباہی سے بچانا ہے اور اسلام آباد میں موجود حکومت چند ماہ کی مہمان ہے۔ انہوں نے کہا یہ صرف انتخابی لڑائی نہیں بلکہ آپ کے مستقبل کا معاملہ ہے، جیسے آپ نے ذوالفقار علی بھٹو اور بے نظیر بھٹو، آصف علی زرداری کو موقع دیا، گلگت بلتستان کے عوام مجھے بھی موقع دیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ مہنگائی اور معاشی بحران کا مقابلہ کرنے کے لیے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام شروع کیا گیا اور پنشن میں 150 فیصد اضافہ کیا جبکہ موجودہ وزیراعظم عمران خان کراچی کی اسٹیل مل بند کرکے 10 ہزار لوگوں کو بے روزگار کرنا چاہتے ہیں اور پورے ملک میں آٹے کا بحران ہے۔بلاول بھٹو نے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت کا ہر وعدہ جھوٹ نکلا اور میں نہیں چاہتا کہ کھرمنگ کا مستقبل تباہ ہو۔انہوں نے کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو اور بے نظیر بھٹو نے جو خواب دیکھا تھا اب وہ ہم پورا کریں گے۔

گلگت شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments